.

'حج کے موقع پر ایک لاکھ سیکیورٹی اہلکار ڈیوٹی دیں گے'

شدت پسندوں کو کسی جگہ قدم نہیں جمانے دیں گے: سعودی وزیرداخلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

#سعودی_عرب کی وزارت داخلہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ منگل کے روز شروع ہونے والے سالانہ #حج کے دوران تقریبا ایک لاکھ سیکیورٹی اہلکار حجاج کرام کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے دن رات مسلسل ڈیوٹی دیں گے۔

میجر جنرل #منصور_الترکی کا کہنا تھا حج کے دوران حجاج کی حفاظت کرنے والوں میں ایلیٹ انسداد دہشت گردی یونٹ، ٹریفک پولیس اور ایمرجنسی سول ڈیفنس سے تعلق رکھنے والے اہلکار شامل ہوں گے۔ اس کے علاوہ ان اہلکاروں کو فوج اور نیشنل گارڈ کے اضافی سپاہیوں کی مدد بھی حاصل ہوگی۔

یہ حج ایسے موقع پر ہورہا ہے کہ جب سعودی عرب کو انتہا پسند گروپ دولت اسلامیہ عراق وشام 'داعش' کی جانب سے شدید خطرے کا سامنا ہے۔ #داعش کی جانب سے سعودی عرب میں رواں سال کی جانے والی کارروائیوں میں درجنوں افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

الترکی نےعالمی خبررساں ایجنسی 'اے پی' کو دئیے جانے والے خصوصی انٹرویو میں یہ عہد کیا کہ شدت پسند سعودی عرب میں کہیں بھی ایک سینٹی میٹر کی جگہ پر قبضہ نہیں کرسکیں ہیں۔

اس سال حج کے دوران کئی اندازوں کے مطابق تقریبا 30 لاکھ لوگ #مکہ میں جمع ہوں گے۔