.

"شامی انتخابات کا اعلان اشتعال انگیز اور غیر حقیقی ہے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی صدر فرانسو اولاند نے اپنے شامی ہم منصب بشار الاسد پر تنقید کرتے ہوئے ان کی جانب سے شام میں اگلے ماہ انتخابات کے اعلان کو اشتعال انگیز اور غیر حقیقی قرار دے دیا ہے۔

مسٹر اولاند نے پیرس میں جرمن چانسلر انجیلا مرکل کے ساتھ ملاقات کے بعد کہا کہ "ماہ اپریل کے دوران الیکشن کا خیال نہ صرف اشتعال انگیز بلکہ مکمل طور پر غیر حقیقت پسندانہ ہے۔"

بشار الاسد نے شام میں جنگ بندی کے واشنگٹن اور ماسکو کے بیان کے بعد اعلان کیا تھا کہ شام میں 13 اپریل کو پارلیمانی انتخابات کا انعقاد کیا جائے گا۔

اس کے علاوہ جمعہ کے روز بشار کے اتحادی روسی صدر ولادیمیر پوتن نے برطانیہ، فرانس، جرمنی اور اٹلی کے سربراہان کو بتایا ہے کہ اپریل کے دوران انتخابات کا اعلان امن عمل کی تعمیر کے اقدامات سے مداخلت نہیں کرے گا۔

پچھلے سال ماہ نومبر کے دوران ویانا میں عالمی طاقتوں نے ایک روڈ میپ پر اتفاق کیا تھا جس کے ذریعے سے شامی فریقوں کے درمیان چھ ماہ کے لئے مذاکرات کروائے جائیں گے، جس کے بعد ایک نیا آئین تشکیل دیا جائے گا اور 18 ماہ کے دوران نئے انتخابات کروائے جائیں گے۔