.

دبئی: دنیا کے پہلے مصنوعی جزیرے کا افتتاح

’ٹیرس برج العرب‘ ٹورزم ویژن 2020ء کی کامیابی کی طرف اہم قدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی حکومت نے سیاحتی ویژن 2020ء کو کامیاب بنانے کے لیے دنیا کے پہلے منفرد مصنوعی جزیرے کا افتتاح کیا ہے، جو بلا شبہ دنیا بھر کے سیاحوں کے لیے اپنے اندر خاص کشش رکھتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ’ٹیرس برج العرب‘ نامی اس مصنوعی جزیرے کا افتتاح گذشتہ روز حاکم دبئی اور امارات کے نائب صدر الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے نائب حاکم دبئی الشیک مکتوم بن محمد بن راشد آل مکتوم کی موجودگی میں کیا۔ مصنوعی جزیرے کا منفرد تخیل دبئی ہولڈنگ نے پیش کیا اور اسے اب عملی شکل میں لایا جا رہا ہے۔

مصنوعی جزیرے کی دیگرخصوصیات میں 5000 ٹن وزنی فولادی عمارت کی تعمیر ہے۔ 10 ہزار مربع میٹر افقی رقبے پر مشتمل اس جزیرے کے آٹھ بڑے اجزاء فن لینڈ میں تیار کیے گئے جنہیں دبئی لایا گیا ہے۔

یہ مصنوعی جزیرہ 100 میٹر خلیج العربی کے اندر ہونےکے ساتھ ساتھ اصلی جزیرے کے ساتھ ساتھ ہوگا، جہاں اس اصلی جزیرے پر برج العرب ہوٹل کا افتتاح پہلے ہی کیا جا چکا ہے۔

ٹیرس برج العرب اپنی نوعیت کا پہلا مصنوعی جزیرہ ہوگا جسے خشکی پر تیار کرنے کے بعد پانی میں اتارا جائے گا۔ مصنوعی جزیرے کی تیاری کا کام بین الاقوامی شہرت یافتہ تعمیراتی فرم ’اڈماریس‘ کو دیا گیا ہے۔ اس کمپنی نے جزیر ے کے کچھ اجزاء فن لینڈ میں تیار کیے ہیں جنہیں بحری جہازوں کی مدد سے دبئی لایا جائے گا۔