.

سعودی عرب :مساجد کے لیے ایس ایم ایس کے ذریعے عطیات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں چار مساجد کی تعمیر کے لیے ایک خیراتی ادارے نے منفرد طریقے سے عطیات جمع کیے ہیں اور اس نے موبائل فون پر ایس ایم ایس کے ذریعے ایک کروڑ دس لاکھ سعودی ریال اکٹھے کرلیے ہیں۔

مساجد کی تعمیر نو کے لیے کام کرنے والے خیراتی ادارے ''المساجد'' نے الریاض ،الاحساء ،الدمام اور عسیر میں چار مساجد کی تعمیر کے لیے یہ عطیات جمع کیے ہیں۔

المساجد کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ایک رکن ڈاکٹر عثمان المناعی نے بتایا ہے کہ وہ مستقبل میں ایسی مساجد میں تعمیر نو اور تزئین ٔو آرائش کا کام کرنا چاہتے ہیں جن کی لاگت پانچ لاکھ سعودی ریال سے بھی کم ہو۔

انھوں نے مزید بتایا ہے کہ سعودی جامعات میں زیر تعلیم چونسٹھ طلبہ نے جدید مساجد کے 180 ڈیزائن بنا کر پیش کیے ہیں اور ادارے کی جانب سے اب منتخبہ بہترین ڈیزائن بنانے والے طلبہ کو انعامات سے نوازا جائے گا۔

ڈاکٹر المناعی کے بہ قول ان کے ادارے نے اپنے قیام کے بعد سے 2014ء اور 2015ء میں ایک ہزار سے زیادہ مساجد تعمیر کی ہیں اور ان پر ساڑھے چھے کروڑ سے زیادہ لاگت آئی ہے۔ اس وقت پانچ کروڑ ساٹھ لاکھ سعودی ریال کی لاگت سے مساجد کی تعمیر کے اکاون منصوبوں پرکام جاری ہے اور ان میں سے امید ہے کہ قریباً چالیس رمضان المبارک کے دوران مکمل ہوجائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ان کا ادارہ مخیّر حضرات اور عطیات دینے والوں میں اعتماد پیدا کرنے کے لیے بہت سے مالی اور انتظامی امور کی کھلے عام وضاحت کرتا ہے۔ان کے عطیہ دہندگان کے ساتھ ابلاغ کے چینل کھلے ہیں اور وہ سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعے بھی منصوبوں پر ہونے والی پیش رفت کو ملاحظہ کرسکتے ہیں۔