عادل الجبیر اور جان کیری میں اچانک ملاقات ،داعش مخالف جنگ پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے اپنے امریکی ہم منصب جان کیری سے واشنگٹن میں اچانک ملاقات کی ہے اور ان سے سعودی عرب کے تین شہروں میں سوموار کو خودکش بم حملوں کے تناظر میں داعش کے خلاف جنگ کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق جان کیری اور عادل الجبیر نے شام میں سیاسی انتقال اقتدار کی ضرورت ،لیبیا کی صورت حال ،یمن میں جاری تنازعے کے سیاسی تصفیے اور اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان ہونے والی حالیہ پیش رفت کے حوالے سے بھی بات چیت کی ہے۔

مدینہ منورہ میں مسجد نبوی کے نزدیک سوموار کی شام ایک خودکش بم دھماکے میں سعودی سکیورٹی فورسز کے چار اہلکار شہید ہوئے تھے۔العربیہ نیوز چینل کے نمائندے کی اطلاع کے مطابق خودکش بم دھماکا سٹی کورٹ اور مسجد نبوی کے درمیان واقع ایک پارکنگ ایریا میں نماز مغرب کے وقت ہوا تھا۔اس وقت روزے دار افطاری کی تیاری کررہے تھے۔

نمائندے نے مزید بتایا ہے کہ خودکش بمبار نے سات سکیورٹی اہلکاروں کو ہدف بنایا تھا اور اس نے انھیں یہ چکمہ دینے کی کوشش کی تھی کہ وہ ان کے ساتھ افطار کرنا چاہتا ہے لیکن اس نے ان کے نزدیک خودکو دھماکے سے اڑا دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں