ترک سکیورٹی فورسز اور کرد باغیوں میں جھڑپیں، 100 سے زیادہ ہلاکتیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کے جنوب مشرقی علاقے میں رات سے جاری جھڑپوں میں سکیورٹی فورسز کے 13 اہلکار اور کالعدم کردستان ورکرز پارٹی ( پی کے کے) کے کم سے کم ایک سو جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔

ترک فورسز کے ساتھ لڑائی میں ایک دن میں کرد باغیوں کا یہ سب سے زیادہ جانی نقصان ہے۔ترکی کے ایک سکیورٹی ذریعے نے ہفتے کے روز بتایا ہے کہ ایران کی سرحد کے نزدیک واقع صوبے وان میں جمعے اور ہفتے کی درمیانی شب کرد باغیوں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان لڑائی شروع ہوئی تھی۔

سرکاری خبررساں ایجنسی اناطولو نے ایک مقامی گورنر کے حوالے سے بتایا ہے کہ علاقے میں جھڑپوں کے بعد کرد باغیوں کے خلاف فضائی کارروائی جاری ہے اور لڑاکا جیٹ سے ان کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔

گذشتہ روز ترکی کے کرد اکثریتی جنوب مشرقی علاقے میں فضائی حملوں اور جھڑپوں میں پی کے کے کے ستائیس جنگجو ہلاک ہوگئے تھے جبکہ ترک سکیورٹی فورسز کے سات اہلکار مارے گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں