ایرانی حجاج.. خامنہ ای سے ناراض اور حج انتظامات پر مسرور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

رواں سال مناسک حج ادا کرنے کے لیے متعدد ایرانی شہری ایران کے بیرون سے مکہ مکرمہ پہنچے۔ اس سے قبل تہران نے اپنے شہریوں کو اس دینی فریضے کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب کا سفر کرنے سے روک دیا تھا۔

"العربيہ" نیوز چینل نے اتوار کے روز عرفات میں متعدد ایرانیوں سے گفتگو کی جو ایران کے باہر دیگر ممالک سے سعودی عرب آئے ہیں۔ ان افراد نے مناسک کی ادائیگی پر اپنی مسرت کا اظہار کیا اور حج کے موقع پر کیے جانے والے انتظامات کو سراہا۔

علاوہ ازیں ایرانی حجاج نے ایرانی حکومت کے تصرفات بالخصوص علی خامنہ ای کی جانب سے اپنے شہریوں کو حج کے لیے سعودی عرب کا سفر کرنے سے روک دینے پر ، ناراضگی کا اظہار کیا۔ اس لیے کہ بعض ایرانی اس موقع کا شدت سے انتظار کرتے ہیں تاکہ اپنے ان عزیزوں سے ملاقات کرسکیں جو پالیسی وجوہات کی بنا پر ایران واپس نہیں آسکتے ہیں۔ یہ لوگ امید لگا کر بیٹھے تھے کہ مکہ مکرمہ ان کی اپنے عزیزوں سے ملاقات کی سرزمین ہوگا تاہم خامنہ ای نے ان کی تمام امیدوں کو خاک میں ملا دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں