حوثی باغیوں کا باب المندب میں امارات کے امدادی بحری جہاز پر حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں نے متحدہ عرب امارات کے امدادی سامان لے جانے والے ایک بحری جہاز پر آبنائے باب المندب میں حملہ کیا ہے۔

سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد نے اس حملے کو ایک خطرناک اشارہ قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ جہاز پر سوار سویلین کو بچا لیا گیا ہے۔قبل ازیں حوثی ملیشیا نے یواے ای فوج کے امدادی سامان لے جانے والے ایک بحری جہاز کو حملے میں نشانہ بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔

حوثیوں نے اپنے زیرانتظام سبا نیوز کی ویب سائٹ پر پوسٹ کیے گئے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''ایک اماراتی جنگی بحری جہاز کو بحر احمر کے کنارے واقع موخا کے ساحلی علاقے کی جانب آنے پر راکٹوں سے ہدف بنایا گیا ہے اور اس کو مکمل طور پر تباہ کردیا گیا ہے''۔

یو اے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام کے مطابق فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کشتی ( چھوٹا بحری جہاز) جنوبی شہر عدن سے معمول کے سفر سے واپس آرہا تھا۔اس نے کہا کہ اس کشتی کو کرائے پر لیا گیا تھا۔

اماراتی فوج نے واقعے کی مزید تفصیل نہیں بتائی ہے اور نہ یہ واضح کیا ہے کہ آیا یہ جہاز تباہ ہوگیا ہے یا اس کو کتنا نقصان پہنچا ہے۔البتہ اس نے کہا ہے کہ واقعے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں