برق رفتار حرمین ٹرین کی آزمائشی سروس نے کام شروع کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں حرمین ٹرین کی آزمائشی سروس کا کامیاب تجربہ کر لیا گیا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ حرمین ریل گاڑی فی گھنٹہ تین سو کلومیٹر کا سفر طے کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق پبلک ٹرانسپورٹ اتھارٹی کے چیئرمین ڈاکٹر رمیح بن محمد الرمیح نے بتایا کہ حرمین ٹرین کی آزمائشی سروس کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ ٹرین کی آزمائشی سروس کا تجربہ کامیاب رہا۔ ٹرین کو تین سو کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار شاہ عبداللہ اکنامک سٹی سے مدینہ منورہ کے درمیان اسے چلا کر دیکھا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ حرمین ٹرین مکہ مکرمہ کو مدینہ منورہ سے ملانے کے ساتھ ساتھ جدہ کے شاہ عبدالعزیز بین الاقوامی ہوائی اڈے اور برابغ میں شاہ عبداللہ اکنامک سٹی کے درمیان بھی چلائی جائے گی۔ پلان کے مطابق یہ منصوبہ رواں سال کے اختتام تک مکمل کرلیا جائے گا۔

حرمین ٹرین کے لیے 450 کلومیٹر طویل پٹری بچھائی گئی ہے۔ اس ٹرین کا مقصد حجاج کرام اور معتمرین کو دونوں مقدس شہروں [مکہ اور مدینہ] کے درمیان تیز ترین ٹرانسپورٹ کی سہولت مہیا کرنا ہے۔ ٹرین سروس کی سہولت ملنے کے بعد مکہ معظمہ اور مدینہ منورہ کے درمیان مسافت سمٹ کر دو گھنٹوں میں مکمل ہو جائے گی اور سالانہ 35 ریل گاڑیوں سے 60 ملین افراد دونوں شہروں کے درمیان سفر کر سکیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں