.

سعودی عرب :یمنی حوثیوں کو ایرانی اسلحے کی وصولی سے متعلق یو این رپورٹ کا خیرمقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی کابینہ نے اقوام متحدہ کی حالیہ ایک رپورٹ کا خیرمقدم کیا ہے جس میں ایران کی جانب سے یمن میں ہتھیار مہیا کرنے پر عاید پابندی کی خلاف ورزیوں کی تفصیل بیان کی گئی ہے۔

سعودی کابینہ نے منگل کے روز اپنے اجلاس میں کہا ہے کہ اقوام متحدہ کی اس رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ ایران سلامتی کونسل کی قرار داد نمبر 2216 کی پاسداری نہیں کررہا ہے ۔اس کے تحت 2015ء سے یمن میں اسلحہ مہیا کرنے پر پابندی عاید ہے لیکن ایران اس کی صریح خلاف ورزی کرتے ہوئے حوثی باغیوں کو بیلسٹک میزائل اور بغیر پائیلٹ طیار ے ( ڈرون) مہیا کر رہا ہے اور حوثی باغی ان ہتھیاروں کو سعودی عرب اور یمن میں اپنے مخالفین کے خلاف حملوں کے لیے استعمال کررہے ہیں۔

سعودی وزراء نے امریکی عدلیہ کے لبنان کی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کو منشیات کی اسمگلنگ سے رقوم کی فراہمی کی تحقیقات کے لیے ایک خصوصی یونٹ تشکیل دینے سے متعلق اعلان کا بھی خیرمقدم کیا ہے۔ حزب اللہ اس طرح حاصل ہونے والی رقوم کو دہشت گردی کے مقاصد کے لیے استعمال کررہی ہے۔

امریکی عدلیہ نے نئی کمیٹی کو حزب اللہ کے مالی معاون افراد اور اس کو رقوم کی ترسیل کا ذریعے بننے والے نیٹ ورکس کے خلاف تحقیقات کرنے اور ان کا سراغ لگانے کی ذمے داری سونپی ہے۔