.

سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے القدیہ منصوبے کا افتتاح کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے تفریح ،کھیلوں اور ثقافت کے نئے منصوبے القدیہ کا ہفتے کے روز افتتاح کردیا ہے۔

القدیہ کا علاقہ سعودی دارالحکومت الریاض سے چالیس کلومیٹر مغرب میں واقع ہے۔منصوبے کے تحت اس کو مملکت کا سب سے بڑا اور اہم سیاحتی مقام بنایا جائے گا۔القدیہ منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب میں اعلیٰ سعودی عہدے داروں کے علاوہ بعض بین الاقوامی کمپنیوں کے سربراہوں اور سرمایہ کاروں نے بھی شرکت کی ہے۔اس منصوبے کا پہلا مرحلہ 2022ء میں مکمل ہوگا۔

اقتصادی ترقی

منصوبے کے افتتاح کے موقع پر القدیہ کے چیف ایگزیکٹو مائیکل رینینگر نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’’ ہمیں خوشی ہے ، ہم سعودی مملکت کی اقتصادی ترقی میں اہم کردار ادا کرنے جا رہے ہیں۔ یہاں نہ صرف تفریح کی صنعت میں سرمایہ کاری کے مواقع پیدا ہوں گے بلکہ سعودی نوجوانوں کی صلاحیتوں کی ترقی کے لیے مواقع بھی دستیاب ہوں گے‘‘۔

القدیہ منصوبے کی فاؤنڈیشن کونسل کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر فہد بن عبداللہ تونسی نے کہا کہ اس منصوبے کا سنگ بنیاد دراصل سعودی قیادت کی خواہشات کو حقیقت کا روپ دینے کی جانب ایک اہم قدم ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ ’’ یہ سعودی قیادت کی بڑے منصوبوں کی ترقی کے لیے انتھک کوششوں کا بھی مظہر ہے۔ان منصوبوں سے بالواسطہ اور بلاواسطہ شہریوں اور مملکت دونوں ہی کو اقتصادی فوائد حاصل ہوں گے اور سعودی عرب کے ویژن 2030ء کے تحت پائیدار ترقی کی جانب پیش رفت ہو گی ‘‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’’ سعودی مملکت کی دو تہائی آبادی 35 سال سے کم عمر افراد پر مشتمل ہے۔انھیں تفریح کے مواقع مہیا کرنے کے لیے القدیہ ایسے منصوبے کی اشد ضرورت تھی۔اس منصوبے سے 30 ارب ڈالرز کی بچت ہوگی اور اس رقم کو سعودی نوجوانوں کے لیے ملازمتوں کے نئے مواقع پیدا کرنے اور ملکی معیشت کے مختلف شعبوں پر صرف کیا جاسکے گا‘‘۔

منصوبے کی خصوصیات

القدیہ میں تفریحی سرگرمیوں کے مختلف مواقع مہیا کیے جائیں گے ۔یہاں تربیتی ادارے قائم کیے جائیں گے ، موٹر گاڑیوں کی دوڑ کے شائقین کے لیے صحرا اور ہموار زمین میں ٹریک بنائے جائیں گے۔پانی اور برف کے علاوہ فطری ماحول میں تفریح کے مواقع مہیا کیے جائیں گے ۔

سیاحوں اور زائرین کے لیے القدیہ میں تاریخی ، ثقافتی اور تعلیمی پروگراموں کا بھی انعقاد کیا جائے گا۔القدیہ میں تجارتی مراکز ، ریستوراں ، ہوٹل اور رئیل اسٹیٹ کے منصوبے تعمیر کیے جائیں گے اور معاشرے کے تمام طبقات کی ضروریات کے مطابق خدمات مہیا کی جائیں گی۔