.

اوبر کمپنی کے ڈرائیور نے اسرائیلی سفارت کار کو گاڑی سے نکال دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے شہر شکاگو میں "اوبر" کمپنی کے لیے کام کرنے والے ایک ٹیکسی ڈرائیور نے ایک اسرائیلی سفارت کار کو عبرانی زبان میں بات کرنے پر اپنی گاڑی سے اتار دیا۔

امریکی وسط مغرب میں اسرائیلی نائب قونصل جنرل کے عہدے پر فائز "ایٹے مِلنر" کے مطابق وہ جمعرات کی شام 5:30 پر اوبر کی ایک گاڑی میں سوار ہوئے۔ اس دوران مِلنر نے اپنے فون پر گفتگو کرتے ہوئے جوں ہی عبرانی زبان میں "تمہارا کیا حال ہے" کہا تو گاڑی کا ڈرائیور چِلّا کر بولا کہ "ابھی گاڑی سے نکل جاؤ"۔

مِلنر کے مطابق ڈرائیور نے انہیں آگاہ کیا کہ اس مِلنر کے عبرانی زبان میں گفتگو کرنے پر ایسا کیا۔

دوسری جانب "اوبر" کمپنی نے "WBBM" ٹی وی چینل کو بتایا کہ مذکورہ واقعے کی تحقیقات جاری ہیں جن کے مکمل ہونے تک ڈرائیور نہ تو کام کر سکتا ہے اور نہ کمپنی کی ایپلی کیشن کو استعمال کر سکتا ہے۔ کمپنی کے مطابق "امتیازی برتاؤ کو کسی بھی صورت" میں نظر انداز نہیں کیا جائے گا۔

ایٹے مِلنر کا کہنا ہے کہ وہ سمجھتے ہیں کہ اس ڈرائیور کو دوبارہ گاڑی چلانے کی اجازت نہیں دی جانی چاہیے اس لیے کہ "وہ اپنے اعصاب پر قابو نہیں رکھ سکتا"۔