سعودی عرب کی عالمی کپ کے آخری پول میچ میں مصر کے خلاف دو ایک سے شاندار فتح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

سعودی عرب کی قومی فٹ بال ٹیم روس میں کھیلے جارہے فیفا عالمی کپ فٹ بال ٹورنا منٹ میں اپنی واحد فتح حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے اور اس نے مصر کی ٹیم کو گروپ اے کے آخری میچ میں ایک کے مقابلے میں دو گول سے ہرا دیا ہے۔

سعودی عرب کی ٹیم نے اس میچ میں فتح کے بعد تین پوائنٹس حاصل کیے ہیں اور وہ گروپ اے میں تیسرے نمبر پر رہی ہے مگر مصر کی ٹیم اپنے مشہور عالم فارورڈ محمد صلاح کی شاندار کارکردگی کے باوجود کوئی میچ نہیں جیت سکی اور وہ صفر پوائنٹ کے ساتھ چوتھے نمبر پر رہی ہے۔

اس آخری پول میچ میں مصر کی جانب محمد صلاح نے پہلے ہاف میں سعودی عرب کے خلاف گول کیا تھا اور اپنی ٹیم کو برتری دلادی تھی لیکن مصری ٹیم کی یہ برتری زیادہ دیر برقرار نہ رہ سکی اور نصف وقت سے تھوڑی دیر پہلے سعودی عرب کے سلمان الفراج نے پینلٹی پر گول کردیا۔سعودی عرب کی جانب سے میچ کا فیصلہ کن گول کھیل کے آخری لمحات میں اور اضافی پانچویں منٹ میں سالم الدوسری نے کیا۔

گروپ اے میں شامل یوروگوائے کی ٹیم نو پوائنٹس کے ساتھ سرفہرست رہی ہے اور روس کی ٹیم چھے پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی ہے اور یوں انھوں نے پری کوارٹر مرحلے کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے جبکہ مصر اور سعودی عرب کی ٹیمیں عالمی کپ ٹورنا منٹ سے باہر ہوگئی ہیں۔

سعودی عرب کی ٹیم ٹورنامنٹ کے افتتاحی میچ میں روس سے پانچ گول سے ہار گئی تھی مگر یوروگوائے کے خلاف اس نے اچھے کھیل کا مظاہرہ کیا تھا اور اس سے وہ صرف ایک گول سے ہاری تھی۔ٹورنا منٹ کے تین میچوں میں اس کے خلاف سات گول ہوئے اور اس نے دو گول کیے ہیں ۔

مصری ٹیم لیور پول کلب سے تعلق رکھنے والے اسٹرائیکر محمد صلاح کی موجودگی کے باوجود کوئی نمایاں کاکردگی دکھانے میں ناکام رہی ہے اور اس کو ٹورنا منٹ میں مسلسل تین شکستوں سے دوچار ہونا پڑا ہے۔تاہم مصری ٹیم کو ایک یہ اعزاز حاصل ہوگیا ہے کہ اس کے گول کیپر عصام الحضری فٹ بال کے کسی بھی عالمی کپ ٹورنا منٹ میں حصہ لینے والے معمر کھلاڑی بن گئے ہیں۔سعودی عرب کے خلاف آخری میچ میں شرکت کے وقت ان کی عمر 45 سال سے زیادہ تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں