.

افغانستان : جنوبی صوبہ ہلمند میں طالبان کے بم حملے میں انتخابی امیدوار ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند میں طالبان کے بم حملے میں ایک اور انتخابی امیدوار ہلاک ہوگیا ہے۔

افغان حکام کے مطابق بم ایک صوفے کے نیچے چھپایا گیا تھا اور اس کے دھماکے میں انتخابی امیدوار جابر قہرمان ہلاک ہوگئے ہیں ۔ طالبان نے اس بم حملے کی ذمے داری قبول کرلی ہے۔ مقتول جابر ہلمند سے 20 اکتوبر کو ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لیے امیدوار تھے۔

صوبائی گورنر کے ترجمان عمر ژواک نے بتایا ہے کہ جابر قہرمان اپنے انتخابی دفتر میں حامیوں کے ساتھ ایک اجلاس میں شریک تھے۔اس دوران میں ان کے صوفے کے نیچے رکھا بم دھماکے سے پھٹ گیا۔اس سے سات افراد زخمی ہوئے ہیں۔انھوں نے کہا کہ بم دھماکے کے الزام میں متعدد افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ افغانستان میں تاخیر سے ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لیے پولنگ سے قبل تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوچکا ہے۔ طالبان کے علاوہ داعش کے جنگجو اب تک متعدد انتخابی امیدواروں یا ان کے جلسوں کو بم حملوں میں نشانہ بنا چکے ہیں۔ان حملوں میں دس انتخابی امیدوار ہلاک ہوچکے ہیں ۔ان میں زیادہ تر کو ہدف بنا کر قتل کیا گیا ہے۔