فرانس کے صدر مشتعل احتجاج کو ٹھنڈا کرنے کے لیے فوری اقدامات کا اعلان کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایسے وقت میں جب کہ پیرس کی سڑکیں "زرد جیکٹوں" والے حکومت مخالف افراد سے بھری نظر آ رہی ہیں ،،، فرانس کے صدر عمانوئل ماکروں آج پیر کے روز قوم سے اہم خطاب کریں گے۔ الیزے پیلس کے مطابق ماکروں کا خطاب مقامی وقت کے مطابق رات آٹھ بجے نشر کیا جائے گا۔

دوسری جانب فرانس کی وزیر محنت موریئل بینیکو نے ٹی وی کو دیے گئے بیان میں کہا ہے کہ ماکروں "نمایاں اور فوری" اقدامات کا اعلان کریں گے مگر ان میں کم سے کم اجرت کو بڑھانا شامل نہیں۔ بینیکو کے مطابق اجرت کی کم سے کم سطح کو بڑھانے سے ملازمتیں ختم ہو جائیں گی۔ اس لیے کہ بہت سی چھوٹی کمپنیاں اس کی متحمل نہیں ہو سکتیں اور اس کے نتیجے میں دیوالیہ ہونے کا خطرہ ہے۔

ادھر حکومت کے ترجمان بنجامین گریفو نے غیر حقیقی توقعات سے خبردار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جادوئی چھڑی سے زرد جیکٹوں والے احتجاج کنندگان کی تمام مشکلات حل نہیں ہوں گی۔

اس سے قبل اتوار کے روز دارالحکومت پیرس اور دیگر شہروں کی سڑکوں کو بکھرے ہوئے شیشوں اور جلی ہوئی گاڑیوں سے صاف کیا گیا۔ فرانس کی عدلیہ نے باور کرایا ہے کہ لوٹ مار کی کارروائیوں اور پولیس پر حملوں میں ملوث افراد کے خلاف سخت اقدامات کیے جائیں گے۔

ہفتے کے روز پیرس میں حکومت کے مخالفین اور پولیس کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔ اس دوران پولیس پر کریکر پھینکے گئے، گاڑیوں کو آگ لگائی گئی اور صدر ماکروں کی اقتصادی پالیسیوں پر احتجاج کرتے ہوئے تجارتی مراکز، دکانوں اور ریستورانوں کو برباد کیا گیا۔

یاد رہے کہ حالیہ مظاہروں کے بعد فرانس کی حکومت نے پٹرول اور ڈیزل پر ٹیکس میں مقررہ اضافے کو ختم کر دیا ہے۔

فرانس کے صدر عمانوئل ماکروں نے 27 نومبر کو اپنے آخری اہم خطاب میں کہا تھا کہ وہ "قانون کے دائرے سے خارج" عناصر کے سبب اپنی پالیسیوں کو تبدیل نہیں کریں گے۔

زرد جیکٹوں والوں کے احتجاج میں ٹیکس میں کمی، کم سے کم اجرتوں میں اضافے اور پینشن کی خصوصیات کی بہتری کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ البتہ فرانس کے بجٹ میں خسارے کے سبب صدر ماکروں کے پاس مزید رعائتوں کے حوالے سے کوئی قابل ذکر گنجائش نہیں ہے۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں