.

کرونا وائرس : 6500 سے زیادہ تارکینِ وطن یو اے ای میں لوٹ آئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں حالیہ دنوں میں 6500 سے زیادہ غیرملکی شہری لوٹ آئے ہیں۔ وہ یو اے ای میں کرونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد اپنے آبائی ممالک کو واپس چلے گئے تھے یا پہلے سے وہاں رہ رہے تھے اور وبا پھیلنے کے بعد ان کی یو اے ای میں واپس ناممکن ہوگئی تھی۔

یو اے ای کی حکومت کے ترجمان نے بدھ کو ایک بیان میں ان غیرملکی تارکین وطن کی واپسی کی تصدیق کی ہے۔

واضح رہے کہ یو اے ای کی حکومت نے کرونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے 23 مارچ کو تمام تجارتی مسافر پروازیں معطل کردی تھیں۔حال ہی میں حکومت نے محدود پیمانے پر پروازوں کی بحالی کا اعلان کیا تھا اور یو اے ای کی دو سرکاری فضائی کمپنیوں ایمریتس (الامارات) اور اتحاد کے ذریعے دوسرے ممالک میں پھنسے ہوئے اماراتی شہریوں اور مکینوں کو واپس لایا جارہا ہے۔

یو اے ای کی وزارت خارجہ میں اسسٹنٹ انڈر سیکریٹری برائے قونصلر امور ڈاکٹر خالد المزروئی نے العربیہ کو بتایا ہے کہ '' اب تک کل 6504 غیرملکی شہریوں کو امارات کی قومی فضائی کمپنیوں کے ذریعے واپس لایا جاچکا ہے۔''

یو اے ای کے مکینوں اور سیاحوں کو لاک ڈاؤن کے دوران میں واپس لانے کے لیے فضائی کمپنیاں الگ سے یک طرفہ پروازیں چلا رہی ہیں۔

انھوں نے مزید بتایا ہے کہ ہوائی اڈوں پر خاص پروازوں کو اُترنے کی اجازت ملنے کے بعد اب تک یو اے ای سے دوسرے ممالک کو واپسی کے لیے 317 پروازیں چلائی جاچکی ہیں اور ان کے ذریعے 74745 غیرملکیوں کو واپس بھیجا گیا ہے۔آیندہ دنوں میں غیرملکیوں کی یو اے ای سے واپسی کے لیے مزید 112 پروازیں چلائی جائیں گی۔

تاہم ابھی تک یہ واضح نہیں کہ مسافروں پر عاید حکومت کی تمام پابندیاں کب ختم ہوں گی۔یو اے ای نے کرونا وائرس کی وَبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے تمام ممالک سے تعلق رکھنے والے شہریوں کو آمد پر ویزوں کے اجرا پر پابندی عاید کررکھی ہے اور یو اے ای کے شہری بھی بیرون ملک سفر پر نہیں جا سکتے ہیں۔

قبل ازیں آج ہی دبئی سے تعلق رکھنے والی امارات ائیرلائنز نے آٹھ ممالک کے نو شہروں کے لیے 21 مئی سے اپنی پروازیں بحال کرنے کا اعلان کیا ہے۔وہ برطانیہ اور آسٹریلیا کے درمیان بھی رابطہ پروازیں چلائے گی۔

بیرون ملک سے دبئی واپسی کے خواہاں یو اے ای کے مکین مسافروں کو وفاقی اتھارٹی برائے شناخت اور شہریت (آئی سی اے) سے آن لائن منظوری لینا ہوگی۔ان تمام مسافروں کا دبئی میں آمد کے بعد محکمہ صحت کے تحت کرونا وائرس کا ٹیسٹ کیا جائے گا۔اس کے بعد انھیں 14 روزہ تک قرنطینہ میں رکھا جائے گا اور پھر ان کا دوبارہ ٹیسٹ ہوگا۔