.

بھارت : ایک دن میں کرونا کے سبب 1100 اموات اور 64 ہزار نئے کیسز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارت میں بدھ کے روز اعلان کیا گیا ہے کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا کے سبب 1092 اموات کا اندراج ہوا۔ یہ ایک دن کے اندر ملک میں اس وبائی مرض سے فوت ہونے والوں کی سب سے بڑی تعداد ہے۔

کرونا کے سبب اموات کے لحاظ سے بھارت کا دنیا بھر میں چوتھا نمبر ہے جب کہ متاثرین کی تعداد کے لحاظ سے وہ تیسرے نمبر پر ہے۔ ملک میں کرونا سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 27 لاکھ سے زیادہ ہو چکی ہے۔ گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران بھارت میں کرونا کے 64 ہزار سے زیادہ تصدیق شدہ کیسوں کا اندراج ہوا۔

خیال ہے کہ محدود تعداد میں ٹیسٹوں کے سبب دنیا میں کسی بھی دوسرے مقام کی طرح بھارت میں بھی متاثرین کی اصل تعداد کہیں زیادہ ہے۔

بھارت کی 28 ریاستیں ہیں۔ ملک میں کرونا کے سبب مجموعی اموات کا 63% صرف 4 ریاستوں میں ہے جب کہ ان ریاستوں میں متاثرین کی تعداد ملک کے کل کیسوں کا 54.6% ہے۔ مغربی مہاراشٹرا ، تامل ناڈو، آندھرا پردیش اور کرناٹکا ملک میں سب سے زیادہ متاثرہ علاقے ہیں۔

ادھر بھارت کے وزیر داخلہ امیت شاہ گذشتہ روز منگل کو ایک بار پھر ہسپتال میں داخل ہو گئے۔ انہیں تھکن اور جسم میں درد محسوس ہونے پر ہسپتال لایا گیا۔ یاد رہے کہ چار روز قبل امیت شاہ کا کہنا تھا کہ وہ کوویڈ 19 وائرس سے صحت یاب ہو چکے ہیں۔

امیت شاہ وزیر اعظم نریند موودی کے قریبی معاون ہیں۔ وہ مودی کابینہ میں دوسری اہم ترین شخصیت ہیں۔

نئی دہلی کے میڈیکل سائنسز انسٹی ٹیوٹ کا کہنا ہے کہ وزیر داخلہ اب آرام محسوس کر رہے ہیں اور ہسپتال سے ہی اپنا کام انجام دے رہے ہیں۔ تازہ ترین ٹیسٹ سے ثابت ہوا کہ امیت شاہ اب کرونا وائرس سے متاثر نہیں رہے۔

امیت شاہ کرونا میں مبتلا ہونے والی نمایاں ترین بھارتی سیاسی شخصیت ہیں۔

امریکا اور برازیل کے بعد بھارت میں تیسرے نمبر پر سب سے زیادہ کرونا متاثرین کا انکشاف ہوا ہے۔ واضح رہے کہ 30 جولائی سے بھارت میں روزانہ کرونا وائرس کے 50 ہزار سے زیادہ نئے کیس سامنے آ رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں