اولمپکس میں دو طلائی تمغے جیتنے والے کوریائی ایتھلیٹس کے لیےتاحیات فرائیڈ چکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

جنوبی کوریا نے اس سال کے بیجنگ سرمائی کھیلوں میں اپنی کامیابیوں کا جشن منانے کے لیے دو اولمپک طلائی تمغہ جیتنے والے ایتھلیٹس کو زندگی بھر کے لیے مفت فرائیڈ چکن دینے کا اعلان کیا ہے۔

جنوبی کوریا کے اولمپک وفد کے سربراہ یون ہونگ گیون نے کھلاڑیوں سے وعدہ کیا کہ اگر وہ طلائی تمغہ جیتتے ہیں تو انہیں "چکن تنخواہ" ملے گی۔

فرائیڈ چکن جنوبی کوریا میں مقبول ترین پکوانوں میں سے ایک ہے۔ رپورٹس کے مطابق ملک میں استعمال ہونے والی پولٹری کا ایک تہائی حصہ فرائیڈ شکل میں استعمال کیا جاتا ہے۔

یون جو جنوبی کوریا کے سب سے بڑے فرائیڈ چکن ریستوران جینیسس بار بی کیو کا مالک ہے یقینی طور پر اپنا وعدہ پورا کرنے کے قابل ہیں۔

شارٹ ٹریک اسکیٹرز ہوانگ ڈائی ہیون اور چوئی من جیونگ کو 60 سال کے ہونے تک مفت فرائیڈ چکن دینے کا وعدہ کیا گیا تھا۔

جینیسس باربی کیو چین نے کہا کہ کھلاڑیوں کو اسٹور پر روزانہ خرچ کرنے کے لیے 30,000 ون ($24) کے واؤچر ملیں گے اگر قیمتیں بڑھیں تو رقم بڑھ جائے گی۔

اس نے نشاندہی کی کہ چاندی کا تمغہ جیتنے والوں کو 20 سال کے لیے ہفتے میں دو بار واؤچر ملے گا اور کانسی کا تمغہ جیتنے والوں کو دس سال فرائی چکن ملتا رہے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں