دوست کی منگیترکو دھوکے سے اغوا کرکے زیادتی کا نشانہ بنانے والا ملزم گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عالمی مقابلہ حسن میں حصہ لینے والی ایک مصری خاتون نے ایک مقامی کپمنی مالک اور کاروباری شخصیت پر اپنے اغوا اور ریپ کا الزام عاید کیا ہے۔ دوسری طرف پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکےاس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی ہے۔

یہ واقعہ گذشتہ فروری کا ہے، جب ایک فلائٹ اٹینڈنٹ اور مس مصر ٹائٹل کی امیدوار کو اس کے منگیتر کے دوست نے اغوا کر کے زیادتی کا نشانہ بنایا۔ متاثرہ خاتون نے بتایا کہ اغوا کار نے مجھے کہا کہ میں تمہارے منگیتراور تمہارے درمیان جاری تنازع ختم کرنے میں مدد دینا چاہتا ہوں۔ وہ مجھے ایک اپارٹمنٹ میں لے گیا۔وہاں اس نے حملہ کیا۔ اسے زبردستی کی اور زیادتی کا نشانہ بنایا۔

تحقیقات میں پتہ چلا کہ ملزم کی ملاقات 26 سالہ بیوٹی کوئین سے ہوئی جسے مختصرا ’’این اے‘‘ کہا جاتا ہے۔اس کے ساتھ اس کی منگیتر بھی تھی، جو میڈیا کے شعبے میں کام کرتا ہے۔ان سے واقفیت ہوئی۔اس نے فون پر کہا کہ اس کے منگیترمیرے پاس ہیں اور میں آپ لوگوں کے درمیان معاملہ حل کرنے کے لیے ثالثی کرنا چاہتا ہوں۔

لڑکی نے تفتیشی پولیس افسر کو بتایا کہ اپارٹمنٹ پہنچنے اور داخل ہونے کے بعد اسے اپنی منگیتر نہیں ملے اور اسے ملزم کی نیت پر شک ہوا تو اس نے فرار ہونے کی کوشش کی لیکن اس نے دروازہ بند کر کے اسے حراست میں لے لیا۔اس کے کپڑے اتاردیے اور زبردستی اس کی عصمت دری کی جس سے اس کا شدید خون بہہ گیا۔

اس نے مزید کہا کہ ملزم نے اپنا جرم ختم کرنے کے بعد خود کو اپارٹمنٹ کے باتھ روم میں بند کر لیا۔ خاتون نے اپنے دوستوں سے رابطہ کرکے صورت حال بیان کی۔ انہوں نے موقعے پرپہنچ کر خاتون کو وہاں سے نکالا اور پولیس کو اس واقعے کی اطلاع دی۔ پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکے اس کے خلا کارروائی شروع کردی ہے۔

تفتیشی حکام نے لڑکی کو زبردستی اغوا کرنے اور زیادتی کا نشانہ بنانے کے الزام میں ملزم کو فوجداری عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں