خرطوم میں اردنی سفیر کی رہائش گاہ پر حملہ، توڑ پھوڑ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اردن کی وزارت خارجہ نے آج جمعہ کو کہا ہے کہ سوڈانی دارالحکومت خرطوم میں مملکت کے سفیر کے گھر پر حملہ کیا گیا ہے اور وہاں پر توڑ پھوڑ کی گئی ہے۔

ایک بیان میں وزارت خارجہ نے پورٹ سوڈان کے شہر میں سفیر اور سفارت خانے کے عملے کی موجودگی کی تصدیق کی اورکہا کہ ان میں سے کسی کو کوئی جانی نقصان نہیں پہنچا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ مملکت تشدد اور توڑ پھوڑ کی ہر طرح کی کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے سوڈانی فریقین سے سفارت خانوں اور سفارتی عملے کو تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کرتی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ کسی بھی ملک میں سفارتی عملے کو بین الاقوامی قوانین کے تحت تحفظ حاصل ہوتا ہے اور سوڈان میں اردن کے سفارتی عملے کو عالمی قانون کے تحت تحفظ ملنا چاہیے۔

سوڈانی فوج اور سریع الحرکت فورسز کے نمائندوں نے گذشتہ ہفتے سعودی عرب کے شہر جدہ میں ایک معاہدے پر دستخط کیے تھے۔ جنگ بندی کے اس معاہدے میں سعودی عرب اور امریکا نے ثالثی کا کردار ادا کیا تھا۔ معاہدے کے تحت دونوں فریقین نے سات روز کے لیے لڑائی روکنے اور انسانی امدادی سرگرمیاں بحال کرنے پر اتفاق کیا تھا۔

اپریل کے وسط میں شروع ہونے والے تنازعے کے دوران خرطوم میں کئی سفارتی تنصیبات اور اہلکاروں پر حملے کیے جا چکے ہیں۔ خرطوم میں اردن کے سفارت خانے پر 15 مئی کو دھاوا بول دیا گیا اور توڑ پھوڑ کی گئی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں