الجزائر کی جنگلاتی آگ پر سعودی فرمانروا اور ولی عہد کا اظہار افسوس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی فرمانروا سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان نے جنگل میں لگی خوفناک آگ سے ہونے والی ہلاکتوں پر الجزائر کے صدر عبدالمجید تبون سے افسوس اور ہمدردی کا اظہار کیا۔

سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق شاہ سلمان نے صدر تبون کے نام ایک برقی پیغام میں کہا کہ "ہماری دعا ہے کہ اللّٰہ تعالیٰ مرحومین کی مغفرت اور ان کے اہلِ خانہ کو صبرِ جمیل عطا فرمائے، زخمیوں کو جلد صحت یاب کرے اور آپ کو اور تمام الجزائری بھائیوں کو ہر طرح کی تکلیف اور صدمے سے اپنی امان میں رکھے۔"

ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے بھی ایک برقی پیغام میں الجزائر کے صدر سے حالیہ واقعات پر اظہار افسوس کیا۔

انہوں نے اپنے ٹیلی گرام میں کہا کہ"مجھے کئی الجیری ریاستوں میں آگ لگنے اور لوگوں کے ہلاک اور زخمی ہونے کی خبر ملی اور میں قابلِ احترام صدر اور مہلوکین کے اہلِ خانہ سے اظہارِ تعزیت کرتا ہوں۔ میری اللّٰہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ مرحومین کی مغفرت فرمائے اور زخمیوں کو جلد صحت یاب کرے۔ بیشک وہ سمیع و بصیر ہے۔"

جنوبی افریقہ اور یورپ میں اس وقت شدید گرمی کی لہر جاری ہے اور خطے کے کئی شہروں میں تقریباً 49 ڈگری سینٹی گریڈ درجۂ حرارت ریکارڈ کیا گیا ہے۔

موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے گرمیوں میں لگنے والی جنگل کی آگ نے بحیرۂ روم کے ممالک کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے جس سے الجزائر میں کم از کم 34 اور جنوبی اٹلی میں 2 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

یونان کو بھی بڑھتے ہوئے درجہ حرارت کی ایک نئی لہر کا مقابلہ درپیش ہے کیونکہ دو مشہور سیاحتی جزائر میں جنگل کی آگ بھڑک اٹھی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں