ایمازون جنگل سے ڈھونڈے گئے چار میں سے دو کا والد سوتیلی بیٹی سے زیادتی پر گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

کولمبیا کے ایمازون جنگل سے دو ماہ قبل بچائے گئے چار مقامی بچوں میں سے دو کے والد مینوئل رانوکی کو اپنی سوتیلی بیٹی کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا۔

گرفتاری کی تصدیق سوشل نیٹ ورکس پر استغاثہ کے ذریعے کی گئی۔ پراسیکیوٹر نے وٹوٹو ایبوریجنل کے مقامی 47 سالہ رانوکی کے خلاف الزامات کی وضاحت نہیں کی۔

استغاثہ کے ترجمان نے "ایجنسی فرانس پریس" کو بتایا کہ مکمل معلومات اس وقت سامنے لائی جائیں گی جب اس پر مقدمہ چلایا جائے گا۔ توقع ہے کہ سماعت ہفتہ کے روز ہوگی تاہم سماعت کے حتمی دن کو جج نے طے کرنا ہے۔

زیادتی کے الزام میں گرفتار رانوکی
زیادتی کے الزام میں گرفتار رانوکی

جون میں چار بچے کولمبیا کے جنگل میں اس چھوٹے طیارے کے حادثے کے 40 دن بعد پائے گئے تھے۔ یہ چار بچے جنگل میں بھٹک رہے تھے۔ مقامی گاؤں کے گورنر ولیم کاسترو نے مقامی ٹی وی کاراکول کو بتایا کہ اس بات کی نشانیاں موجود ہیں کہ رانوکی نے اپنی سب سے بڑی سوتیلی بیٹی کے ساتھ ریپ کیا تھا۔

بچوں کے نانا نانی اور دو سب سے چھوٹے بچوں کے والد کے درمیان بچوں کی تحویل کے حق پر لڑائی چھڑ گئی ہے۔ جنگل سے بازیاب کئے گئے چار بچے ایک ماہ تک ہسپتال میں رہنے کے بعد اپنے گھروں کو چلے گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں