واگنرکے مہلوک لیڈروں پریگوژن،اُتکن کی کریملن کے ساتھ یادگارپر پھول کی چادروں کا ڈھیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

روس کے دارالحکومت ماسکو میں کریملن کی دیواروں کے نزدیک کرائے کی ملیشیا واگنر کے بانیوں یوگینی پریگوژن اور دمتری اُتکن کی عارضی یادگار پر پھول کی چادروں کا ڈھیرلگ گیا ہے اور روسی ان کی یاد میں پھول چڑھانے آرہے ہیں۔وہ دونوں گذشتہ بدھ کی رات مبیّنہ طور پر طیارے کے حادثے میں ہلاک ہو گئے تھے۔

کرائے کے فوجی گروپ کے سربراہ اور فوج کی قیادت کے خود ساختہ دشمن پریگوژن کی طیارہ حادثے میں موت کی کوئی حتمی تصدیق نہیں کی گئی ہے۔روسی صدر ولادی میر پوتین نے جمعرات کو انھیں خراجِ عقیدت پیش کیا تھا اورپریگوژن کے ماضی کے بارے میں بات کی تھی۔انھوں نے اس حادثے میں تمام ہلاک شدگان کے پیاروں کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا تھا۔

انھوں نے ’’ابتدائی معلومات‘‘ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’’پریگوژن اور واگنر میں ان کے سرکردہ ساتھی ہلاک ہو چکے ہیں۔ انھوں نے پریگوژن کی تعریف کرتے کہا کہ ان سے کچھ ’سنگین غلطیاں‘ بھی سرزد ہوئی تھیں۔

اس طیارہ حادثے کے بعد صدر پوتین نے واگنر کے جنگجوؤں کو حکم دیا ہے کہ وہ روسی ریاست کے ساتھ وفاداری کے حلف پر دست خط کریں۔انھوں نے جمعہ کے روز اس تبدیلی کے حکم نامے پر دست خط کیے تھے جس کے بعد کریملن نے کہا تھا کہ ’’مغربی ممالک کا یہ کہنا’سراسر جھوٹ‘ ہے کہ پریگوژن کو ان (پوتین) کے حکم پر قتل کیا گیا ہے‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں