آلہ موسیقی پر تلاوت قرآن، مصری موسیقار کو گرفتار کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک مصری موسیقار کی آلہ موسیقی ’’ عود‘‘ کی آوازوں کے ساتھ قرآن کریم کی تلاوت کرنے کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد مصر میں ہنگامہ برپا ہوگیا۔ سوشل میڈیا پر مصری شہریوں نے اس حرکت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور موسیقار کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا۔ موسیقار کے مطابق اس ویڈیو کا مقصد قارئین کو مقام سکھانا ہے۔
بڑے پیمانے پر پھیلنے والے اس ویڈیو کلپ کے مطابق موسیقار نے گلوکاروں اور تلاوت کرنے والوں کے ساتھ قرآن پاک کی آیات کی تلاوت کی اور یہ دعویٰ کیا کہ وہ مقام میں تربیت یافتہ ہیں۔ اس ویڈیو کو دیکھ کر لوگوں میں غم و غصہ کی لہر دوڑ گئی۔ بڑے پیمانے پر لوگوں نے اس کی مذمت کی۔ لوگوں نے اس اقدام کو قرآن کریم کی توہین قرار دیا اور کمپوزر سے تفتثیش کرنے کا مطالبہ کیا۔
العربیہ ڈاٹ نیٹ نے ویڈیو کے مالک احمد حجازی سے رابطہ کیا۔ احمد حجازی نے کہا کہ اس نے اس سے زیادہ کچھ نہیں کیا کہ میں قدرتی طور پر متعدد قراء کو مقام سکھا رہا تھا۔ بظاہر یہ قاری حضرات مقامات کے صحیح ماخذ کے لیے موسیقار احمد حجازی سے انحصار کر رہے تھے۔


مصر میں تلاوت قرآن کرنے والوں کی سنڈیکیٹ نے اس سے قبل ایک مشہور قاری کو قرآن کی تلاوت کے دوران رقص کرنے کی وجہ سے معطل کرنے کا فیصلہ کیا تھا کیونکہ وہ سورۃ الضحیٰ کی تلاوت کر رہے تھے اور تلاوت کے دوران ایک طرح سے گیت کا مظاہرہ کیا تھا۔ اس وقت بھی لوگوں نے شدید ناراضی کا اظہار کیا تھا۔
اسی طرح کا ایک واقعہ مشہور قاری شیخ محمد حامد السلکاوی کے حوالے سے بھی سامنے آیا تھا۔ حامد سلکاوی نے بھی سورہ شوریٰ کی تلاوت کرتے ہوئے عیب دار طریقے سے ہاتھوں اور جسم کو ہلایا تھا اور قرآن کے تقدس کو پامال کیا تھا۔
واضح رہے تلاوت قرآن کے دوران مقامات ایک الگ فن ہے۔ سات مشہور مقامات میں تلاوت کی جاتی ہے۔ یہ مقامات رست، عجم، سیکا، نہاوند، صبا، حجاز اور کرد ہیں۔

Advertisement
مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں