فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ، انسانی بنیادوں پر امدادی سرگرمیوں کے لیے برطانیہ کا 20 ملین پاونڈز کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی وزیر اعظم رشی سونک نے انسانی بنیادوں کے لیے غزہ کے لیے 20 ملین پاونڈز کی رقم کا اعلان کیا ہے۔ پیر کے روز کیے گئے اعلان کے مطابق یہ اضافی امدادی رقم ہے۔

رواں ماہ سے شروع ہونے والی جنگ کے دوران غزہ میں تباہی کے پیش نظر برطانیہ نے اب تک 30 ملین پاونڈز کی رقم کا اعلان کیا ہے۔ اس سے پہلے دس ملین پاونڈ گذشتہ ہفتے بھجوائے گئے تھے۔

سات اکتوبر سے جاری جنگ کے دوران اب تک غزہ میں پانچ ہزار سے زائد فلسطینی لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

وزیر اعظم رشی سونک نے امدادی رقم کا پارلیمنٹ میں اعلان کرتے ہوئے کہا ہم اپنی پہلے بھجوائی گئی امدادی رقم سے دوگنا سے بھی زیادہ بھجوا رہے ہیں۔ واضح رہے اس نئے اعلان سے قبل برطانیہ نے غزہ کے لیے 27 ملین پاونڈ سالانہ کا اعلان کر رکھا ہے۔

برطانوی وزیراعظم کی جانب سے یہ اعلان اس وقت سامنے آیا ہے جب برطانوی قانون ساز مشرق وسطیٰ کی صورت حال اور رشی سونک کے حالیہ دورہ اسرائیل کے بارے میں بات کر رہے تھے۔

رشی سوناک نے کہا غزہ کے لیے امدادی ٹرکوں کا جانا ایک اچھی پیش رفت ہے۔ مگر یہ کافی نہیں ہے۔ ہمیں چاہیے کہ اس امدادی سلسلے میں لگاتار کچھ ڈالتے رہیں تاکہ پانی، خوراک، ادویات اور ایندھن کی ضروریات پوری ہونا شروع ہو جائیں۔

انہوں نے غزہ کے اھلی ہسپتال پر پچھلے منگل کو ہونے والے حملے کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا' امکان یہی ہے کہ یہ واقعہ حماس کے میزائل چلانے سے پیش آیا ، لیکن اس کی ذمہ داری حماس نے اسرائیل پر اور اسرائیل نے حماس پر ڈال دی۔

انہوں نے مزید کہا اپنے گہرے علم ، تجزیے اور انٹیلی جنس رپورٹ اور اسلحے کے ماہرین کی رائے کی بنیاد پر سمجھتے ہیں کہ یہ واقعہ ان میزائلوں کی وجہ سے پیش آیا جو غزہ سے اسرائیل کی طرف پھینکے گئے تھے

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں