حکمت اور تزویراتی تحفظات کے باعث غزہ میں زمینی حملہ لیٹ ہوا: اسرائیلی چیف آف سٹاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

حماس کے غزہ سے اسرائیل پر حملہ کے بعد سے شروع جنگ کو 18 دن ہو گئے ہیں۔ اسرائیل نے غزہ پر خوفناک بمباری شروع کر رکھی ہے۔ صہیونی جارحیت میں 5791 فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔ مرنے والوں میں دو ہزار کے قریب معصوم بچے بھی شامل ہیں۔

منگل کو ٹائمز آف اسرائیل اخبار نے اسرائیلی چیف آف سٹاف ہرزی ہیلیوی کے حوالے سے کہا ہے کہ غزہ کی پٹی میں زمینی حملے میں تاخیر حکمت عملی اور تزویراتی تحفظات کی وجہ سے ہے۔

ہیلیوی نے کہا کہ ہم نے اس کے لیے تیاریاں کر لی ہیں۔ اسرائیلی فوج اور سدرن کمانڈ نے جنگ کے اہداف کو حاصل کرنے کے لیے اچھے حملے کے منصوبے تیار کیے ہیں، اسرائیلی فوج زمینی حملے کے لیے تیار ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم مزید تیار رہنے کے لیے ہر منٹ کا فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ ہر گزرنے والے منٹ میں ہم ہم دشمن پر زیادہ حملہ کر رہے، ان کو مار رہے، بنیادی ڈھانچے کو تباہ کر رہے اور اگلے مرحلے کے لیے مزید معلومات اکٹھی کر رہے ہیں۔

قبل ازیں منگل کو اسرائیلی فوج کے ترجمان ڈینیئل ہگاری نے کہا تھا کہ فوج جنگ کے اگلے مرحلے میں لڑنے کے لیے "تیار اور پرعزم" ہے اور سیاسی ہدایات کا انتظار کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں