اسرائیل آباد کاروں کے تشدد کی روک تھام کے لیے موثر اقدامات کرے: امریکی وزیرخارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلینکن نے جمعرات کو اسرائیل سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مغربی کنارے میں فلسطینیوں کے خلاف آباد کاروں کے تشدد کو روکنے کے لیے "فوری اور ٹھوس" اقدامات کرے۔

محکمہ خارجہ کے ترجمان میتھیو ملر نے کہا کہ بلینکن نے اسرائیلی اپوزیشن لیڈر بینی گینٹز سے فون پر زور دیا کہ "مغربی کنارے میں کشیدگی کو کم کرنے کے لیے مثبت اقدامات کرنے کی فوری ضرورت ہے۔ان اقدامات میں انتہا پسند آبادکاروں کے فلسطینیوں پر بڑھتے حملوں کی روک تھام بھی شامل ہے‘‘۔

بلینکن سان فرانسسکو میں ایشیا پیسیفک اکنامک کوآپریشن (APEC) سربراہی اجلاس میں شرکت کر رہے ہیں۔ انہوں نے 7 اکتوبر کو اسرائیل پر حملے کے بعد سے حماس کے زیر حراست یرغمالیوں کی رہائی کے لیے جاری سفارتی کوششوں پر بھی بات کی۔

اسرائیلی حکام کا کہنا ہے کہ حماس نے غیر ملکیوں سمیت تقریباً 240 افراد کو اغوا کیا اور 1200 کو قتل کیا جن میں زیادہ تر عام شہری تھے۔

اسرائیل نے حماس کو "ختم" کرنے کا عزم کیا ہے اور اس کے بعد سے وہ غزہ کی پٹی پر مسلسل بمباری کر رہا ہے۔ اسرائیل نے غزہ کی پٹی کا مکمل محاصرہ کرنے کے بعد زمینی کارروائیاں شروع کر رکھی ہیں۔

حماس کی وزارت صحت کے مطابق بمباری کے نتیجے میں 11,500 سے زائد افراد ہلاک ہوئے، جن میں زیادہ تر عام شہری اور ہزاروں بچے شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں