فلسطین اسرائیل تنازع

جوبائیڈن انتظامیہ کا ہنگامی اختیارات کے تحت اسرائیل کو فوری اسلحہ فراہمی کا اقدام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکہ کی جوبائیڈن انتظامیہ نے اپنے ہنگامی صورت حال میں استعمال کیے جانے والے اختیارات کے تحت اسرائیل کو ٹینکوں کے 14000 گولے فراہم کرنے کی منظوری دی ہے۔ کانگریس سے اس اسلحہ فراہمی کی منظوری بعد میں لی جائے گی۔

اسرائیل کے لیے امریکہ کی یہ جنگی امداد اس ایک پیکج کا حصہ ہے جس کے تحت امریکی ساختہ ٹینکوں مرکاوا کے 45000 ہزارگولے دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پیکج میں دوسرا جنگی اسلحہ اس کے علاوہ ہے۔

تاہم یہ واضح نہیں ہے کہ یہ اسلحہ اسرائیل مسلسل غزہ میں ہی استعمال کرتا رہے گا یا اس کے علاوہ اسرائیل اپنے آس پاس کے ملکوں کے لیے بھی بروئے کار لانے کی تیاری کے لیے محفوظ رکھے گا۔

تازہ امریکی انتظامیہ کے فیصلے کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ' آرم ایکسپورٹ کنٹرول ایکٹ ایمرجنسی کے تحت دیے جانے والے ٹینکوں کے گولوں کی مالیت 106 اعشاریہ 5 ملین ڈالرہے۔ پینٹاگون کے اعلان کے مطابق یہ گولے اسرائیل کو فوری طور پر فراہم کیے جائیں گے۔

واضح رہے ایک امریکی ترجمان نے تین روز قبل کہا تھا کہ اسرائیل کے ساتھ امریکہ نے جنگی ٹائم ٹیبل کے پلان پر تبادلہ خیال کیا ہے۔ اس دوران یہ اطلاعات بھی سامنے آئیں کہ امریکہ جنگ کو ماہ دسمبر کے آخر تک مکمل کرنے کے حق میں ہے، تاہم یہ نہیں بتایا گیا تھا اسرائیلی کےجنگی ٹائم ٹیبل کے تحت امریکہ اسلحے کے کھاتے میں اسرائیل کو کس حد تک امداد دے گا۔ اب یہ چیزیں سامنے آنے لگی ہیں۔

امریکی ساختہ ٹینکوں ' مرکاوا ' کے فوری بھجوائے جانے والے 14000 والے گولے اس پیکج کا حصہ ہیں جس کے تحت امریکہ اسرائیل کو 500 ملین ڈالر مالیت کا اسلحہ دے گا، امریکہ کے 'مرکاوا' ٹینک غزہ میں استعمال ہونے کے علاوہ اسرائیل کی طرف سے لبنانی سرحد پر بھی تعینات کیے گئے ہیں۔ اسرائیلی گولہ باری سے ہلاک ہونے والے لبنانی صحافی عصام عبداللہ کو اسی 'مرکاوا ' ٹینکے گولے سے نشانہ بنایا گیا تھا۔

واشنگٹن میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ادارے تشویش ظاہر کر رہے ہیں کہ اسرائیل کو اسلحہ بھجوانا سویلینز کی ہلاکتوں پر امریکی اظہار تشویش سے مطابقت نہیں رکھتا۔ تاہم امریکی دفتر خارجہ کے ایک ذمہ دار افسر نے کہا ہے ' امریکہ اسرائیل پریہ واضح کرتا رہے گا کہ بین الاقوامی قوانین کا احترام کرتے ہوئے شہریوں کے نقصان سے گریز کرے۔'


پینٹاگون کے ایک بیان کے مطابق امریکی وزیر خارجہ انتونی بلینکن نے کانگریس کو بتایا ہے کہ 'امریکہ کا اسرائیل کو فوری اسلحہ بھیجنا خود امریکی قومی سلامتی کے مفاد میں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں