خشک سالی کی وجہ سے پانی کی قلت، بارسلونا میں نہانے پرپابندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ہسپانیہ کے شمال مشرقی علاقے کاتالونیا نے جمعرات کو بارسلونا اور اس کے اطراف میں خشک سالی کی ہنگامی حالت کا نفاذ کیا گیا ہے۔

اس ہنگامی حالت کے اعلان کے بعد کاتالونیا کی جنرل کونسل کی طرف سے خشک سالی کی وجہ سے کفایت شعاری کے اقدام کے طور پر جموں اور کھیلوں کے مراکزمیں شاورز پر پابندی لگانے کی تجویز پیش کی ہے۔ بارسلونا میں بارشیں نہ ہونے اور پانی کی کمی کہ وجہ سے تین سال کی سخت پابندیوں کا سامنا کرنے والا ہے۔

پانی کی سطح نیچے جانے لگی

کاتالونیا کی علاقائی حکومت کے سربراہ پیرے آراگونیس نے اس اقدام کا اعلان بحیرہ روم کے ساحل والے خطے کے آبی ذخائر میں پانی کی سطح جذب کرنے کی صلاحیت کے 16 فیصد سے نیچے گرنے کے بعد کیا۔ پانی کی بچت کے اقدامات سے چھ ملین افراد متاثر ہوں گے۔

نہانے پرپابندی

دسمبرکے وسط میں کاتالونیا کی جنرل کونسل نے جموں اور کھیلوں کے مراکزمیں شاورز پر پابندی لگا دی تھی جس میں لوئس کمپنی مونٹجوک اسٹیڈیم اور Ciutat Esportiva Joan Gamper ٹریننگ سینٹرجوکہ ہسپانوی کلب بارسلونا کو خشک سالی میں کفایت شعاری کے طور پراستعمال کرتے ہیں۔

یہ طریقہ کار گذشتہ جنوری میں اپنایا گیا۔ جب کاتالونیا حکومت کی جانب سے خطہ خشک سالی کی روشنی میں "پری ایمرجنسی مرحلے" میں منتقلی کا اعلان کیا گیا۔

موسمیاتی کارروائی کے مشیر ڈیوڈ ماسکورٹ کے مطابق بارسلونا کو اسٹیڈیم اور تربیتی مرکز میں گھاس کی آبیاری کے لیے استعمال ہونے والے پانی کی قیمت کی "ادائیگی" کرنی چاہیے یا "گھر میں شاور" کرنا چاہیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں