سعودی عرب اور فرانس کے درمیان فریگیٹ اوور ہالنگ کا معاہدہ

فرانس زمین سے فضا میں مار کرنے والے جدید ترین راکٹ فراہم کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فرانس کے وزیر دفاع جین یویس لی ڈریا نے سعودی ولی عہد شہزادہ سلمان بن عبدالعزیز اور دیگراعلی حکام کے ساتھ دفاعی معاملات پر بات چیت کے علاوہ دو طرفہ تعلقات کی مضبوطی و فروغ کیلیے تبادلہ خیال کیا ہے۔ سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق فرانس تیل کی دولت سے مالا مال ملک کے ساتھ دفاعی شعبے میں تعاون بڑھانا چاہتا ہے۔

توقع ظاہر کی گئی ہے کہ ان رابطوں کے نتیجے میں سعودی عرب اور فرانس کے درمیان دفاعی شعبے میں متعدد معاہدات کی راہ ہموار ہو جائے گی۔

ابتدائی طور پر سعودی عرب نے فرانس کے ساتھ فریگیٹس کی مرمت اور اوور ہالنگ کے حوالے سے ایک معاہدہ کیا ہے۔ فرانس کی ان تکنیکی مہارتوں سے فائدہ اٹھانے کے معا ہدے پر ایک اعشاریہ انچاس ارب ڈالر کی خطیر رقم خرچ ہو گی۔

فرانسیسی وزیر دفاع کا کہنا تھا'' اس بات چیت کے نتیجے میں اگلے مرحلے پر فرانسیسی اسلحہ بنانے والے ادارے بھی شامل ہو ں گے۔

ذرائع کے مطابق سعودی فرانس بات چیت کے تیجے میں پونے تین ارب یورو کی خطیر رقم کے حامل ایک اور معاہدے کا امکان ہے۔ اس معاہدے کے بعد سعودی عرب فرانس سے جدید ترین زمین سے فضا میں مار کرنے والے راکٹس حاصل کر سکے گا۔

واضح رہے حالیہ ماہ مئی کے بعد فرانس کے وزیر خارجہ کا تیسرا دورہ ہے جبکہ سعودی وزیر خارجہ بھی چند ہفتے پہلے فرانس کا دورہ کر چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں