.

امریکا :اسلام پسندوں کیخلاف عراقی فوج کو تربیت دے گا

تربیت اردن میں ہو گی، داعش ہماری بھی دشمن ہے: امریکی حکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے عراقی ایلیٹ فورسز کو از سر نو تربیت دینے کا فیصلہ کیا ہے، تاکہ عراقی فورسز اسلام پسندوں کے خلاف لڑائی میں کامیاب ہو سکیں۔ اس عسکری تربیت کا اہتمام اردن میں کیا جائے گا۔ یہ بات امریکی حکام نے کہی ہے۔

امریکی فوجی حکام نے اپنی شناخت کی رازداری کی شرط پر بتایا ہے کہ عراقی ایلیٹ فورس کو تربیت دینے کیلیے امریکی فورسز کی محدود تعداد اردن میں مقیم رہے گی اور اس تربیتی مشن کا آغاز اگلے ماہ جون سے کر دیا جائے گا۔ ان ذرائع کے مطابق انسداد دہشت گردی کے کورس کے طرز پر ہو گا۔ اسی نوعیت کی تربیت امریکی فورسز اردنی فوج کو اس سال کے شروع سے دے رہی ہے۔

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ جس طرح داعش عراق کی دشمن ہے اسی طرح امریکا کی بھی دشمن ہے، اس لیے اس کے خلاف عراق کو لڑنے میں مدد دینا جاری رکھنا چاہتے ہیں۔'' ان حکام نے داعش یعنی عراق و شام کو اسلامی ریاست بنانے کیلیے سرگرم تنظیم آئِی ایس آئی ایل عراق اور شام میں مزاحمت کر رہی ہے۔

امریکی حکام کیلیے عراق سے امریکی انخلاء کے بعد سے عراق میں خونریزی کی سطح کا غیر معمول ہو جانا فکر مندی کی بات ہے۔ امریکی حکام یہ بھی سمجھتے ہیں کہ پورے خطے میں دہشت گردی کو عراق سے ہی ایندھن ملتا ہے۔

واضح رہے اوباما انتظامیہ اس سے پہلے ہی عراق کو اپاچی ہیلی کاپٹر اور دوسرا جدید ترین اسلحہ دے ری ہے۔ امریکی حکام کے مطابق عراق میں آئی ایس آئی ایل کے چیلنج سے نمٹنے کیلیے اپنے حساس شعبوں کو متحرک رکھے ہوئے ہے۔ اب اس کا دائرہ وسیع کرنے پر غور کر رہی ہے۔