.

سعودی ٹی وی پر بغیر سکارف کے خاتون اینکر جلوہ گر

ایسا دوبارہ نہیں ہو گا، ٹی وی ترجمان کی عوام کو یقین دہانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے سرکاری ٹی وی چینل اخباریہ نیوز پر سعودی روایت کے برعکس ایک خاتون نیوز اینکر نے بغیر سکارف کے خبریں پیش کر کے خود کو سوشل میڈیا میں سرخیوں اور تبصروں کا موضوع بنا لیا۔

سعودی ریاستی نیوز چینل پر یہ پہلا موقع ہے کہ ایک خاتون اینکر بغر دوپٹے یا سکارف کے سکرین پر جلوہ گر ہوئی ہے۔ ٹی وی کے ترجمان صالح المغائلیف نے اس بارے میں وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ '' ننگے سر والی خاتون اینکر برطانیہ میں قائم سٹوڈیو سے رپورٹ کر رہی تھی۔'' تاہم ترجمان نے سعودی عوام کو یقین دلایا ہے کہ حرکت دوہرانے نہیں دی جائے گی۔''

ترجمان نے کہا خاتون اینکر سعودی عرب کے کسی سٹوڈیو سے رپورٹ نہیں کر رہی تھی ، اگر یہاں ہوتی تو اپنی روایات کی خلاف ورزی کو برداشت نہ کیا جاتا۔''

ننگے سر سعودی ٹی وی کی سکرین پر آنے والی خاتون برطانیہ اور امریکا کی ویب سائتس پر بھی زیر بحث آئی ہے۔ خصوصا سعودی شہریوں نے اس بارے میں اپنا رد عمل دیا ہے۔

واضح رہے سعودی عرب میں خواتین کے ننگے سر خبریں پیش کرنے کا آغاز غیر ملکی نیوز چینلز سے شروع ہوا ہے، تاہم سعودی سر زمین سے رپورٹ کرنے والی خواتین کو سکارف اوڑھنا پڑتا ہے۔