نجی کنٹریکٹرز اپنے اختیارات سے تجاوز کرتے ہیں: پراسیکیوٹر

بلیک واٹر کے ہاتھوں عراقی شہریوں کی ہلاکت کے مقدمے کی سماعت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی جیوری کے سامنے پراسیکیوٹر نے کہا ہے کہ بلیک واٹر کے نام سے معروف امریکا کے نجی کنٹریکٹرز اپنے دائرہ اختیار سے تجاوز کرتے ہوئے کارروائیاں کرتے ہیں۔

امریکی پراسیکیوٹر نے یہ بات بغداد میں 14 افراد کی بلیک واٹر کے ہاتھوں ہلاکت کے مقدمے کی سماعت کے حوالے سے کہی ہے۔ خیال رہے 14 شہریوں کی ہلاکت کا یہ واقعہ 2007 میں پیش آیا تھا۔ عراقی شہری کو اس وقت گولی مار کر ہلاک کیا گیا جب وہ بھاگنے کی کوشش کر رہے تھے۔

امریکی جیوری نے وفاقی پراسیکیوٹر اینتھنی کو محافظین کے خلاف مقدمے میں طلب کیا گیا تھا۔ اس موقع پر پراسیکیوٹر نے مقتولین کے رشتہ داروں کی طرف سے پیش کردہ شہادتیں بھی شمار کیں۔

پراسیکیوٹر نے کہا '' نجی کنٹریکٹرز کے بارے میں اپنے دلائل مکمل کرتے ہوئے کہا یہ بے رحم قاتل ہیں، جو عراق کے ان عام شہریوں کے خلاف چڑھ دوڑے جن سے کوئی خطرہ بھی نہ تھا۔ ''

نجی کنٹریکٹر امریکی سفارت کاروں کے ایک قافلے کے لیے بغداد میں راستہ خالی کرا رہے تھے۔ بغداد میں یہ واقعہ ایک اہم چوراہے پر پیش آیا تھا۔ امکان ہے کہ جیوری ملزمان کے وکیلوں کو اگلے ایک دو روز میں سنے گی۔

واضح رہے امریکی بلیک واٹر کے اہل کاروں پر پاکستان میں بھی ایسی ہی کارروائیوں کا الزام لگتا ر ہا ہے۔ اس سلسلے میں ریمنڈ ڈیوس کے ہاتھوں لاہور میں دو نوجوانوں کا دن دیہاڑے قتل بہت مشہور ہوا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں