.

قطر نے اخوان قیادت کی بے دخلی کا فیصلہ واپس لے لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خلیجی ریاست قطر نے اپنے ہاں پناہ گزیں مصری اخوان المسلمون کے سات اہم رہ نماوں کی بے دخلی کا فیصلہ واپس لے لیا ہے۔

مصری ذرائع ابلاغ نے اخوان المسلمون کے مقرب ذرائع کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ دوحہ حکومت نے چند ہفتے قبل جن سات اخوان قائدین کی جلا وطنی کا فیصلہ کیا تھا اسے واب واپس لے لیا گیا ہے۔

مصری اخبار’’مصرالیوم‘‘ نےاخوان کے مصدقہ ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ دوحہ حکومت مصر کے جلا وطن اخوانی رہ نمائوں کو بے دخل نہیں کرے گی۔ ان سات رہ نمائوں میں اخوان المسلمون کے دو سرکردہ مبلغ جمال عبدالستار اور عصام تلیمہ کے علاوہ جماعت کے سیکرٹری جنرل محمود حسین بھی شامل ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ محمود حسین کی بے دخلی روکنے کے لیے ڈاکٹر یوسف القرضاوی نے قطری حکومت پردبائو ڈالا ہے۔

خیال رہے کہ علامہ یوسف القرضاوی خود بھی مصری حکام کو کئی مقدمات میں مطلوب ہیں۔ قاہرہ حکومت نے ان کی مصری شہریت بھی منسوخ کر دی ہے۔