شہزادہ محمد بن سلمان سعودی شاہی دیوان کے نئے منتظم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے وزیر دفاع اور دیوان خاص کے منتظم شہزادہ محمد سلمان مملکت کی ان اہم شخصیات میں سے ایک ہیں جنہوں نے کم وقت میں اعلیٰ عہدوں پر اہم خدمات انجام دیں اور تیزی کے ساتھ ترقی کی منازل طے کرتے ہوئے شاہی دیوان کے منتظم مقرر ہوئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے شہزادہ محمد بن سلمان کے تعلیمی و سیاسی کیریئر اوران کی سماجی خدمات پر ایک رپورٹ میں روشنی ڈالی ہے۔

رپورٹ کے مطابق شہزادہ محمد نے ابتدائی تعلیم ریاض کے مختلف اسکولوں سے حاصل کی اور ٹاپ ٹین پوزیشن ہولڈرز میں شامل ہوئے۔ دوران تعلیم انہوں نے کئی دوسرے تعلیمی پروگراموں میں بھی حصہ لیا۔ شہزادہ محمد نے گریجویشن ریاض کی شاہ سعود یونیورسٹی میں قانون کے مضمون میں کی۔ یونیورسٹی کے لاء کالج ہی سے انہوں نے سیاسیات میں دوسری پوزیشن حاصل کی۔

تعلیم سے فراغت کے بعد انہیں مختلف حکومتی عہدوں پر کام کرنے کا موقع ملا اور انہوں نے نہایت محنت اور ذمہ داری کے ساتھ اپنے فرائض منصبی انجام دیے۔ حکومتی سرگرمیوں میں حصہ لینے کے ساتھ ساتھ انہوں نے فلاحی اور سماجی سرگرمیوں میں بھی خدمات انجام دیں اور اس میدان میں متعدد ایوارڈز بھی حاصل کیے۔

تعلیم سے فراغت کے بعد شہزادہ محمد نے ملازمت کا آغاز پبلک سروس سے کیا۔ باقاعدہ حکومتی سرگرمیوں میں حصہ لینے سے قبل یہ ان کا عملی زندگی کا پہلا تجربہ تھا۔ بعد ازاں 1428ھ کو اُنہیں سعودی کابینہ کی ماہرین کونسل کا مشیر مقرر کیا گیا۔ سنہ 2007ء سے 2009ء تک انہوں نے ریاض کے گورنر کے مشیر کے طور پر خدمات انجام دیں۔ سنہ 2013ء میں انہیں کئی دیگر عہدوں کی ذمہ داریاں سونپی گئیں۔ ان میں ریاض کے سیکرٹری جنرل، شاہ عبدالعزیز بورڈ کے مشیر اور محکمہ دفاع کی ایگزیکٹیو کمیٹی کے رکن مقرر ہوئے۔

اسی سال انہیں ولی عہد کے دفتر کا انچارج بھی مقرر کیا گیا۔ مارچ 2013ءمیں خصوصی شاہی فرمان کے تحت انہیں شاہی دیوان کا خصوصی مشیر مقرر کیا گیا۔ سات ماہ تک انہوں نے وزارت دفاع میں سپروائز کے عہدے پرخدمات انجام دیں۔ اپریل 2014ء میں شاہی حکم کے تحت انہیں کابینہ میں وزیر مملکت کا چارج بھی سونپا گیا۔

شہزادہ محمد بن سلمان اپنے والد شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی طرح سیاسی خدمات کے ساتھ ساتھ سماجی سرگرمیوں میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے رہے۔ انہوں نے اپنے ہی نام سے ایک فلاحی تنظیم بھی قائم کر رکھی ہے جو محمد بن سلمان بن عبدالعزیز فائونڈیشن کے نام سے سعودی عرب میں مشہور ہے۔ شہزادہ محمد حکومت کی جانب سے جاری کردہ کئی فلاحی پروگراموں کےبھی انچارج رہ چکے ہیں۔ سماجی میدان میں ان کی توجہ نوجوانوں کی صلاحیتوں کو نکھارنے،ادب اور ثقافت سے متعلق سرگرمیوں کو فروغ دینے پر مرکوز رہی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں