.

اسرائیل: غربِ اردن سے گرفتار حماس کا عہدے دار رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے اسی ہفتے دریائے اردن کے مغربی کنارے میں واقع ایک مہاجر کیمپ سے گرفتار کیے گئے اسلامی تحریک مزاحمت (حماس) کے ایک عہدے دار کو رہا کردیا ہے۔

فلسطینی سکیورٹی ذرائع کے مطابق اسرائیلی فورسز نے غربِ اردن کے شہر جنین سے تعلق رکھنے والے حماس کے عہدے دار ماجدی ابوالحجہ کو رہا کرنے کی کوئی وجہ بیان نہیں کی ہے۔اسرائیلی فورسز نے گذشتہ منگل کو جنین کے نزدیک واقع مہاجر کیمپ میں ایک کارروائی کے دوران انھیں گرفتار کیا تھا۔حماس ،جہاد اسلامی کے مزاحمت کاروں اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں ان کا مکان تباہ ہوگیا تھا۔

فلسطینی ذرائع کے مطابق ماجدی کو جنین شہر میں ان کے عزیز واقارب کے حوالے کیا گیا ہے۔اسرائیلی فوج نے فوری طور پر ان کی رہائی سے متعلق رپورٹ پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔اسرائیلی فوج کی ایک خاتون ترجمان نے کہا کہ ''ہمیں اس حوالے سے کوئی نئی اطلاع نہیں ہے''۔

واضح رہے کہ جنین کیمپ میں جہادِ اسلامی اور حماس کے کارکنوں کی ایک بڑی تعداد مقیم ہے۔اسرائیلی فوج اس کیمپ میں آئے دن فلسطینی مزاحمت کاروں کی گرفتاری کے لیے چھاپہ مار کارروائیاں کرتی رہتی ہے اور اس دوران اسرائیلی فوجیوں اور فلسطینیوں کے درمیان جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں۔