.

اسد حکومت نے' داعش' کو جنوبی دمشق سے الرقہ منتقل کرایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی صدر بشار الاسد اور شدت پسند تنظیم 'داعش' کے درمیان اپنی نوعیت کا پہلا اور منفرد معاہدہ طے پایا ہے جس کے تحت جنوبی دمشق میں موجود 'داعش' کے جنگجوؤں کو تنظیم کے خود ساختہ صدر مقام الرقہ منتقل کیا جائے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اس مقصد کے لئے 53 بسوں کا قافلہ ترتیب دیا گیا ہے جن کے ذریعے 'داعش' کے جنگجو الرقہ لیجائے جائیں گے۔

'داعش' اور شامی حکومت کے درمیان براہ راست معاہدے کے بعد انتہا پسند جنگجوؤں کو الحجر الاسود کے علاقے باہر نکلنا ہو گا۔

شامی اپوزیشن پر مشتمل جیش الحرکے فیلڈ کمانڈروں نے اس بات کی تردید کی ہے کہ بشار حکومت یا عوامی کمیٹیاں داعش کے انخلاء کے بعد ان کی جگہ لیں گے، تاہم حکومت کی طرف سے ایسے اشارے ملے ہیں جن سے بشار الاسد کے حامیوں کی ایسا کرنے کی نیت کا پتا چلتا ہے۔