روس کے داعش کے گڑھ الرقہ پر تباہ کن فضائی حملے ،30 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

روس کے لڑاکا طیاروں نے شام میں داعش کے مضبوط گڑھ الرقہ پر متعدد تباہ کن فضائی حملے کیے ہیں جن کے نتیجے میں کم سے کم تیس افراد ہلاک اور ستر سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔ان میں عام شہری اور جہادی دونوں شامل ہیں۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے جمعرات کے روز ایک بیان میں بتایا ہے کہ روسی طیاروں نے الرقہ شہر اور اس کے نواحی علاقوں میں داعش کے ٹھکانوں پر دس فضائی حملے کیے ہیں۔

روس نے ان حملوں کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ چھے ٹوپولیف لڑاکا طیاروں نے الرقہ کے نواح میں بمباری کی ہے اور اس میں شہر کے شمال مغرب میں واقع کیمیائی ہتھیاروں کی ایک فیکٹری کو تباہ کردیا گیا ہے۔

روسی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ الرقہ کے شمال اور جنوب مشرق میں داعش کے اسلحے کے ایک ڈپو اور ایک تربیتی کیمپ کو بھی تباہ کردیا گیا ہے۔ان حملوں میں انتہا پسندوں کو بھاری مالی ومادی نقصان پہنچا ہے اور متعدد جنگجو مارے گئے ہیں۔

داعش کے گڑھ پر ان حملوں سے ایک روز قبل ہی روس کی وزارت دفاع نے شام کے جنگ زدہ شمالی شہر حلب میں روزانہ تین گھنٹے کے لیے زمینی اور فضائی حملے روکنے کا اعلان کیا تھا تاکہ محصور شہریوں کو انسانی امداد بہم پہنچائی جاسکے۔اس جنگ بندی پر آج جمعرات سے عمل درآمد کا آغاز ہونا تھا۔

اقوام متحدہ نے دو روز پہلے حلب میں فوری طور پر انسانی بنیاد پر جنگ بندی کا مطالبہ کیا تھا اور کہا تھا کہ اس شہر میں گذشتہ ایک ہفتے کے دوران باغیوں اور اسدی فوج کے درمیان شدید لڑائی کے نتیجے میں شہری ڈھانچے کو شدید نقصان پہنچ چکا ہے جس سے بیس لاکھ مکینوں کو پانی کی قلّت کا سامنا ہے اور برقی رو بھی معطل ہے۔

عالمی ادارے کے عہدے داروں نے خبردار کیا تھا کہ ''اگر برقی رو اور آب رسانی کے نظام کو فوری طور پر بحال نہ کیا گیا تو اس کے لاکھوں شہریوں کے لیے سنگین مضمرات ہوں گے کیونکہ شدید گرمی کی لہر میں پانی کی قلّت اور بجلی کی بندش سے بچے پانی سے متعلقہ بیماریوں کا شکار ہوسکتے ہیں۔

شامی فوج اور اس کی اتحادی ملیشیاؤں نے روس کی فضائی مدد سے باغیوں کے زیر قبضہ حلب کے مشرقی حصے کا مکمل محاصرہ کررکھا ہے۔شامی فوج نے گذشتہ ماہ ان علاقوں کو سامان رسد پہنچانے کے لیے استعمال ہونے والی کاستیلو روڈ کو بند کردیا تھا۔تاہم گذشتہ ہفتے باغی گروپوں نے ایک بڑا حملہ کرکے شامی فوج سے بعض علاقے واپس لے لیے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں