یہودی بستیوں کے قانون کے خلاف اسرائیلی سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

انسانی حقوق کے ایک اسرائیلی اور ایک فلسطینی گروپ نے مشترکہ طور پر بدھ کے روز اسرائیل کی سپریم کورٹ میں ایک پٹیشن دائر کی ہے۔ پٹیشن میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہودی آبادکاروں کے مفاد میں فلسطینی اراضی کو ہتھیانے سے متعلق اسرائیلی پارلیمنٹ میں منظور کیے جانے والے حالیہ قانون کو منسوخ کیا جائے۔

یہ پٹیشن The Legal Center of Arab Minority Rights in Israel یعنی Adalah اور Jerusalem Legal Aid and Human Rights Center کی جانب سے پیش کی گئی ہے۔

دونوں گروپ مقبوضہ مغربی کنارے میں مقامی فلسطینی کونسلوں کی نمائندگی کر رہے ہیں جہاں کی اراضی پر اسرائیلی بستیوں کی تعمیر کے اجازت نامے جاری کیے جائیں گے۔

مذکورہ متنازع قانون کے تحت فلسطینیوں کی اس ذاتی اراضی کو قبضے میں لیا جا سکے گا جس پر اسرائیلیوں نے بغیر پرمٹ کے عمارتیں تعمیر کر لی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں