.

عراق : سات ہزار سے زیادہ اغوا شدہ افراد الحشد الشعبی کی جیلوں میں !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے صوبہ صلاح الدین سے تعلق رکھنے والے رکن پارلیمان بدر الفحل نے انکشاف کیا ہے کہ شیعہ ملیشیاؤں پر مشتمل الحشد الشعبی کے زیر قبضہ چار جیلیں ہیں اور وہاں صلاح الدین اور دوسرے صوبوں سے اغوا کیے گئے سات ہزار سے زیادہ افراد ہیں۔

قبل ازیں انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے الحشد الشعبی ملیشیا پر گذشتہ سال فلوجہ میں داعش کے خلاف کارروائی کے دوران میں ساڑھے چھے سو عراقیوں کو اغوا کرنے کا الزام عاید کیا تھا۔

اس تنظیم نے ان اغوا شدہ افراد کی بازیابی کے لیے ’’وہ کہاں ہیں؟‘‘ کے عنوان سے مہم شروع کی تھی۔

الحشد الشعبی کی سرگرمیوں سے متعلق ہی ایران کی خبررساں ایجنسی تسنیم نے بعض تصاویر شائع کی ہیں۔یہ تصاویر عراقی بچوں کی ہیں جو عراق میں الحشد الشعبی کے کیمپوں میں خطرناک ہتھیار چلانے کی تربیت حاصل کررہے ہیں۔

اس ایرانی ایجنسی نے ان تصاویر کے ساتھ لکھا ہے کہ جنگجوؤں کے بچوں کو مستقبل کے لیے عسکری تربیت دی جارہی ہے اور وہ ایک دن اپنے آباو اجداد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ان ہتھیاروں کو اٹھائیں گے۔