.

’داعش‘ کے بعد اگلا چیلنج سیکیورٹی اور انٹیلی جنس ہے: العبادی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی نے کہا ہے کہ شدت پسند گروپ ’داعش‘ کے خلاف جنگ میں فتح کے بعد عراق کو اگلا چیلنج سیکیورٹی اور انٹیلی جنس شعبے میں درپیش ہے۔ انہوں نے ریاستی سیکیورٹی اداروں کو دشمن پر اپنی فوقیت اوربالادستی کے قیام کے لیے جدید ترین ٹیکنالوجی کے استعمال کی تاکید کی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق بغداد میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم حیدر العبادی نے کہا کہ عراق نے کئی خطرناک چیلنجز کو کامیابی، طاقت اور فتح مندی سے عبور کیا ہے۔ قومی سلامتی کے اداروں کا اس کامیابی میں اہم کردار ہے۔ یہ کامیابی ویسے نہیں ملی، اس کے لیے ہمیں جانوں کے نذرانے پیش کرنا پڑے۔

ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کو شکست دینے کے بعد ہمیں کسی غفلت کا شکار نہیں رہنا چاہیے۔ ہمیں دہشت گردوں کو دوبارہ سراٹھانے سے روکنے کے لیے بہت کچھ کرنا ہوگا۔ دشمن باغیانہ سوچ رکھتا ہے اور وہ چھپ کر وار کرنا چاہتا ہے مگر ہمیں انٹیلی جنس کے میدان میں خود کو مضبوط کرناہوگا۔

حیدر العبادی کا کہنا تھا کہ عراق کو کئی ایک مہمات درپیش ہیں۔ دہشت گردوں سے چھڑائے گئے علاقوں میں امن واستحکام بحال کرنا، سیکیورٹی رٹ اور انٹیلی جنس شعبے کو مضبوط کرنا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی اداروں کے قابل تجدید ویژن کو عوام کی حمایت حاصل ہونا چاہیے۔ عوام اور ادارے مل کر ہی عراق کو اس کے اندرونی اور بیرونی دشمنوں سے محفوظ رکھ سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بدعنوانی ایک خطرناک جراثیم ہے جو داعش کے ذریعے عراق میں داخل ہوا۔ عراق کے سیکیورٹی اداروں کے اندر بھی احتساب کا نظام موجود ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ داعش کے خلاف کامیابی کی طرح عراق سیکیورٹی اور انٹیلی جنس کے شعبوں میں بھی کامیابیاں حاصل کرے گا۔