.

اسرائیل اور فلسطین کے درمیان امن امریکا کی بدستور ترجیح ہے:مائیک پومپیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ اسرائیلی، فلسطینی تنازع کا حل ٹرمپ انتظامیہ کی بدستور ترجیح ہے ۔البتہ امریکا اس بات سے متفق نہیں کہ یہ دیرینہ تنازع مشرقِ اوسط میں عدم استحکام کا بنیادی سبب ہے۔

امریکی وزیر خارجہ سوموار کو عمان میں اردنی ہم منصب ایمن صفدی سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو کررہے تھے۔انھوں نے فلسطینیوں پر زوردیا ہے کہ وہ اسرائیل کے ساتھ امن بات چیت کا دوبارہ آغاز کریں ۔انھوں نے کہا کہ امریکا تنازع کا دو ریاستی حل قبول کرنے کو تیار ہے۔ان کے بہ قول یہ مذاکرات کا ممکنہ نتیجہ ہوسکتا ہے۔

مسٹر پومپیو نے غزہ میں نہتے فلسطین مظاہرین کے خلاف گذشتہ ایک ماہ کے دوران میں صہیونی فوج کے طاقت کے وحشیانہ استعمال پر اسرائیل پر تنقید سے گریز کیا ہے۔اس کے بجائے انھوں نے کہا:’’ امریکا اسرائیل کے حقِ دفاع کا مکمل حامی ہے‘‘۔

واضح رہے کہ غزہ کی پٹی اور اسرائیل کے درمیان سرحدی علاقے میں گذشتہ ایک ماہ کے دوران میں فلسطینی مظاہرین پر اسرائیلی فوجیوں کی اندھا دھند فائرنگ سے کم سے کم چالیس فلسطینی شہید اور سیکڑوں زخمی ہوچکے ہیں ۔غزہ کے ہزاروں مکین لاکھوں فلسطینی مہاجرین کے حق واپسی کی حمایت میں مظاہرے کررہے ہیں۔