.

شام سے امریکی انخلاء کے بعد کرد فورسز نے فرانس سے مدد مانگ لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی حکومت کی جانب سے شام سے فوج واپس بلانے کے اعلان کے بعد امریکی حمایت یافتہ 'کرد فورسز' ایک نئی مشکل سے دوچار ہوگئی ہیں۔ ذرائع کے مطابق شام کی کرد فورسز نے امریکی انخلاء کے اعلان کے بعد فرانس سے فوجی مدد کا مطالبہ کیا ہے۔

العربیہ چینل کی رپورٹ کے مطابق سیرین ڈیموکریٹک کونسل کے ایک وفد نے شمالی شام سے امریکی فوج کے انخلاء کے اعلان کے بعد فرانسیسی حکام کے ساتھ ملاقات کی ہے۔ اس ملاقات میں امریکی اعلان کے نتائج اور مضمرات پر بات کرنے کے ساتھ ساتھ پیرس سے مدد کا بھی مطالبہ کیا گیا۔

خیال رہے کہ دو روز قبل امریکا نے شام سے اپنی فوجیں واپس بلانے کا اعلان کیا تھا۔ فرانس نے واشنگٹن کے اس فیصلے کو نا مناسب، غیر دانش مندانہ اور مہلک قرار دیا ہے۔

شام میں کردوں کی نمائندہ ڈیموکریٹک کونسل کے سیاسی بیورو کی عہدیدار الھام احمد نے فرانس سے شمالی شام کے علاقوں کو نو فلائی زون قرار دینے کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں ترکی کی طرف سے ممکنہ حملے کے لیے اپنی فورسز تعینات کرنا پڑتی ہیں تو اس کے نتیجے میں داعش کے خلاف جاری کارروائی روک جائے گی اور داعشی جنگجوئوں کو اس کا فائدہ پہنچے گا۔

الھام احمد نے شام میں داعش کے خلاف سرگرم عالمی اتحاد سے اپیل کی کہ وہ داعش کے خطرات کے مکمل خاتمے تک اپنا مشن جاری رکھیں۔