.

مصر : ٹرین حادثہ، دوکنڈکٹروں میں لڑائی نے 25 انسانوں کی جان لے لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے پراسیکیوٹر جنرل نے دارالحکومت قاہرہ میں ٹرین کے مہلک حادثے کی ابتدائی تحقیقات کے بعد کہا ہے کہ یہ افسوس ناک واقعہ ٹرین کے دو کنڈکٹروں کے درمیان لڑائی کے نتیجے میں پیش آیا ہے ۔

پراسیکیوٹر جنرل نبیل صادق نے کہا ہے کہ بدھ کو ایک کنڈکٹر نے ریل کار کو اسٹیشن کے بیرئیر سے ٹکرا دیا تھا جس کے نتیجے میں زور دار دھماکا ہوا تھا اور آگ سے ریل گاڑی کی بریکوں نے کام چھوڑ دیا تھا۔

اس دوران میں ٹرین کے ڈرائیور نے ایک اور کنڈکٹر سے لڑنا جھگڑنا شروع کردیا تھا۔اس کنڈکٹر نے اس کی ریل کار کا راستہ روک دیا تھا مگر وہ ڈرائیور ریل کار کو بریک لگائے یا اس کو روکنے کا کوئی بندوبست کیے بغیر ہی نیچے اتر گیا تھا جس کے بعد ٹرین کا انجن تیزرفتاری سے مرکزی اسٹیشن پر ٹریک کے آخر میں کنکریٹ کی رکاوٹ جا ٹکرایا تھا اور اس کے بعد ایک زور دار دھماکا ہوا تھا۔

مصر ی حکام کا کہنا ہے کہ ٹرین کے اس حادثے اور پھر آگ لگنے سے پچیس افراد مارے گئے ہیں او ر چالیس زخمی ہوگئے ہیں۔