.

#مکہ_سمٹ کا انعقاد سعودی عرب کے قائدانہ کردار کی عکاسی کرتا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی سینیئر علماء کونسل کے جنرل سیکرٹریٹ کا کہنا ہے کہ رمضان کے آخری عشرے میں بیت اللہ کی ہمسائیگی میں اسلامی، عرب اور خلیجی سربراہی اجلاس کے انعقاد سے ان کی اہمیت دو چند ہو گئی ہے۔

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی دعوت پر ہونے والے ان اجلاسوں کا مقصد یک صف ہونا، ایک موقف پر اکٹھے ہونا اور امت کو فتنوں اور شر سے محفوظ رکھنا ہے۔

‏اس سلسلے میں علماء کونسل کے جنرل سیکریٹریٹ کی جانب سے آج جاری بیان میں مزید کہا گیا کہ "اس مبارک موقع پر ان سربراہ اجلاسوں کا بیت اللہ کے پڑوس میں منعقد ہونا سعودی عرب کے تاریخی اور قائدانہ کردار کا غماز ہے۔ سعودی عرب الحرمین الشریفین اور مسلمانوں کے مقدس مقامات کی سرزمین ہے۔ مملکت، مسلمانوں اور عربوں کے معاملات میں اپنی خدمت پیش کرنے اور انہیں ایک موقف پر اکٹھا کرنے کے سلسلے میں کبھی پیچھے نہیں رہی۔ اس حوالے سے اللہ رب العزت کی ذات کے بعد ہمیں خادم الحرمین الشریفین، ان کے ولی عہد اور ان کے برادران پر پورا اعتماد ہے۔ وہ جو اقدام اٹھائیں گے وہ اسلام، مسلمانوں، عرب اور مسلمانوں کی سلامتی کے تحفظ اور مفاد میں ہو گا۔‘‘

’’ہم اللہ رب العزت سے دعا گو ہیں کہ وہ خادم الحرمین الشریفین اور ان کے ولی عہد کو اُن کی عظیم کوششوں کی جزا دے اور امت مسلمہ کے حالات کو بہتر فرما دے"۔