سعودی عرب میں ہوا صاف کرنے کا میگا منصوبے کا افتتاح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں ہوا صاف کرنے کا ایک بڑا منصوبہ شروع کیا گیا ہے۔ اس منصوبے کے تحت مکہ مکرمہ کی مختلف مساجد کو صاف اور ٹھنڈی ہوا کی فراہمی یقینی بنائی جا سکے گی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مکہ معظمہ میں ہوا صاف کرنے کے منصوبے کا باقاعدہ افتتاح خادم الحرمین الشرییفن شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے مشیر اور مکہ کے گورنر شہزادہ خالد الفیصل نے کیا۔ اس موقع پر سعودی وزیر مذہبی امور الشیخ عبداللطیف آل الشیخ اور دیگراعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔ اس منصوبے کے ذریعے مسجد نمرہ اور مشاعر مقدسہ میں الخیف مسجد کو تازہ اور صاف ہوا فراہم کی جاسکے گی۔ خیال رہے کہ مقدس دارالحکومت (مکہ معظمہ) میں ہوا کو صاف کرنے اور ایئر کنڈیشن فراہم کا یہ اپنی نوعیت کا سب سے بڑا منصوبہ ہے۔ اس منصوبے کے تحت مسجد نمرہ اور مسجد الخیف کو تازہ ہوا فراہم کی جاسکے گی۔ ایک منٹ میں ان دونوں مساجد کو ایک منٹ میں 10 لاکھ ساڑھے تین مکعب فٹ تاز فراہم کی جائے گی۔

خیال رہے کہ مسجد نمرہ میں ایئرکنڈیشن کے 60 یونٹ لگائے جائیں گے جو سو فی صد تازہ اور صاف ہوا فراہم کریں گے۔ اس کے علاوہ 122 ایگزاسٹ فین لگائے جائیں گے جو گرم اور آلودہ ہوا کو خارج کریں گے۔ یہ ایگزاسٹ فین ایک گھنٹے میں دو بار چلائے جائیں گے۔ مسجد خیف میں 13 ایئرکنڈیشن یونٹ لگائے جائیں گے جب کہ گرم اور آلودہ ہوا کو نکالنے کےلیے 30 ایگزاسٹ فین لگائے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں