.

عراق کے جنوبی شہر نجف میں ایرانی قونصل خانہ پھر نذرآتش؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے جنوبی شہر نجف میں اتوار کو ایک مرتبہ پھر ایران کے قونصل خانے میں آتش زدگی کی اطلاع سامنے آئی ہے۔العربیہ کے نمایندے کے مطابق قونصل خانہ کی جانب محکمہ شہری دفاع کی گاڑیاں جاتے ہوئے دیکھی گئی ہیں۔

نجف میں گذشتہ بدھ کو حکومت مخالف مظاہرین نے ایرانی قونصل خانے کو آگ لگا دی تھی جبکہ سکیورٹی فورسز کی فائرنگ سے چھے مظاہرین ہلاک ہوگئے تھے۔

بغداد اور عراق کے جنوبی شہروں میں یکم اکتوبر سے حکومت مخالف پُرتشدد احتجاجی مظاہرے جاری ہیں۔ سکیورٹی فورسز کی کارروائیوں اور جھڑپوں میں چار سو سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔عراقی سکیورٹی فورسز کے اہلکاراحتجاجی ریلیوں میں شریک مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے براہ راست گولیاں چلاتے ہیں جس سے اتنی زیادہ تعداد میں ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

گذشتہ ماہ ایک سرکاری رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ اکتوبر کے پہلے ہفتے میں 157 افراد مارے گئے تھے۔اس کے بعد حکومت مخالف احتجاجی مظاہروں میں وقفہ آیا تھا اور 25 اکتوبر کو دوبارہ بغداد اور جنوبی شہروں میں عراقیوں نے دوبارہ مظاہرے شروع کردیے تھے۔ وہ ارباب اقتدار کی بدعنوانیوں ، بے روزگاری کی بلند شرح اور سرکاری خدمات کے پست معیار کے خلاف سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں اور حکومت سے اصلاحات کا مطالبہ کررہے ہیں۔