سوڈان: عمر البشیر کے وفادار سفارتکار اور سرکاری عمال برطرف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوڈان میں نئی عبوری حکومت نے معزول صدر عمر البشیر کے دور میں سیاسی بنیادوں پر بھرتی کیے گئے سفارت کار اور انتظامیہ میں شامل سرکاری عمال کو ان کے عہدوں سے ہٹا کر ان کی جگہ نئی تعیناتیاں کرنا شروع کر رکھی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوڈان میں 'ایمپاورمنٹ ریمول کمیٹی' کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ معزول صدر عمرالبشیر کے مقرب درجنوں سفارت کاروں کو برطرف کردیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ برس اپریل میں سوڈان میں عوامی احتجاج کے بعد فوج نے تین دھائیوں تک صدر رہنے والے عمر البشیر کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا۔

ایمپاور منٹ ریموول کمیٹی کے نائب سربراہ محمد الفکی سلیمان نے کہا کہ وزارت خارجہ کے کئی سینیر افسران اور 109 سفارت کاروں کو ان کےعہدوں سے ہٹا دیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ان عہدوں پر سیاسی بنیادوں سے ہٹ کر شہریوں کو تعینات کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ سابق صدر کے دور میں سیاسی بنیادوں پر سرکاری عہدوں پر بھرتی کیے گئے تمام افراد کو ہٹایا جا رہا ہے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ اس فیصلے سے سوڈانی شہریوں کو 150 سے 200 نئی ملازمتیں مل سکیں گی۔

کمیٹی کے ایک رکن طہ عثمان نے بتایا کہ ان میں سے کچھ سفارت کاروں کو خود سابق صدر البشیر نے مقرر کیا تھا۔ ان میں سے بعض کالعدم نیشنل کانگرس پارٹی سے تعلق رکھتے ہیں۔

کمیٹی نے سوڈان کے مرکزی بینک اور 11 دیگر سرکاری بینکوں کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کو تحلیل کردیا اور آٹھ بینکوں کے ڈائریکٹرز کو بھی برخاست کردیا۔ گذشتہ ماہ کمیشن نے سابق حکمران جماعت کے اثاثے ضبط کر لیے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں