.

مصر میں 24 اور 25 اکتوبر کو پارلیمانی انتخابات منعقد کرانے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے الیکشن کمیشن نے 24 اور 45 اکتوبر کو ملک میں پارلیمانی انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے۔

چیف الیکشن کمشنر لاشین ابراہیم نے جمعرات کو ایک نشری پریس کانفرنس میں پارلیمانی انتخابات کے انعقاد اور ان کے شیڈول کا اعلان کیا ہے۔انھوں نے کہا ہے کہ بیرون ملک مقیم مصری ووٹر 21 سے 23 اکتوبر تک پارلیمانی انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال کرسکیں گے۔

مصری ایوان نمایندگان کے گذشتہ انتخابات 2015ء میں منعقد ہوئے تھے۔اس منتخب ایوان میں صدر عبدالفتاح السیسی کے حامیوں کو برتری حاصل ہے۔

خود عبدالفتاح السیسی 2018ء میں 97 فی صد ووٹ لے کر دوبارہ ملک کے صدر منتخب ہوگئے تھے۔اس سے چار سال پہلے 2014ء میں وہ اتنے فی صد ہی ووٹ لے کر پہلی مرتبہ صدر منتخب ہوئے تھے مگر دونوں مرتبہ ووٹ ڈالنے کی شرح کم رہی تھی۔

اگست میں مصر میں پارلیمان کے ایوان بالا سینیٹ کے پہلی مرتبہ انتخابات منعقد ہوئے تھے۔ ان میں ووٹ ڈالنے کی شرح صرف 14۰23 فی صد رہی تھی۔تبصرہ نگاروں کے بہ قول کرونا وائرس کی وبا اور اس نئے ایوان کے بارے میں عدم شعور کی وجہ سے بہت کم تعداد میں ووٹر اپنا حق رائے دہی استعمال کرنے کے لیے نکلے تھے۔

اپریل 2019ء میں مصری ووٹروں نے ایک ریفرینڈم میں آئینی ترامیم کی منظوری دی تھی ۔ ان کے تحت صدر عبدالفتاح السیسی 2030ء تک ملک کے صدر رہ سکتے ہیں۔