.

ایران بندرگاہوں کو سعودی عرب پرحملوں کے لیے استعمال کر رہا ہے: الاریانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وزیر اطلاعات ونشریات معمر الاریانی نے یمن کے حوثی باغیوں کی طرف سے سعودی عرب پر حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حوثی باغی اپنے زیرتسلط بندرگاہوں کو سعودی عرب میں شہری آبادی اور بحر احمر میں جہازوں پر حملوں کے لیے استعمال کر رہے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ‌ کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ 'ٹویٹر' پر متعدد ٹویٹس میں انہوں‌نے کہا کہ یمنی فوج نے ایران سے اسلحہ اسمگل کرنے والے حوثیوں کے ایک گروپ کو پکڑا ہے جس نے تفتیش کے دوران اعتراف کیا کہ اسے پاسداران انقلاب کے ذریعے عسکری تربیت فراہم کی گئی ہے۔ وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ ایران سے یمن میں حوثیوں کو اسلحہ کی فراہمی، بیلسٹک میزائلوں کے ذریعے مدد، ڈورن طیاروں کی فراہمی اور حوثی باغیوں کو جنگی تربیت فراہم کرنے سے ثابت ہوگیا ہے کہ ایران یمن کی خانہ جنگی میں براہ راست ملوث ہے۔

الاریانی کا کہنا تھا کہ ایران یمن کے حوثی باغیوں اور خطے کے دوسرے مسلح گروپوں کو خطے میں اپنے ایجنڈے کو توسیع دینے کے لیے استعمال کر رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حوثی باغی الحدیدیدہ، الصلیف اور راس عیسیٰ‌بندرگاہوں کو سعودی عرب کے شہریوں پر حملوں اور بحر احمر سے گذرنے والے بحری جہازوں پر حملوں کے لیے استعمال کر رہے ہیں۔